.

ایران: نئی پارلیمان کے رکن کی کرونا وائرس سے موت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی نئی پارلیمان کے رکن عیسیٰ جعفری کووِڈ-19 میں مبتلا ہونے کے بعد سوموار کو وفات پاگئے ہیں۔

عیسیٰ جعفری کو گذشتہ بدھ کو کرونا وائرس کا شکار ہونے کے بعد دارالحکومت تہران کے ایک اسپتال میں داخل کیا گیا تھا اور وہ انتہائی نگہداشت کے یونٹ میں زیر علاج تھے۔

مرحوم ایران کی نئی پارلیمان میں دو شہروں بہار اور کبود ارہنگ کی نمایندگی کرتے تھے اور وہ اس کے کرونا وائرس سے وفات پانے والے پہلے رکن ہیں۔اس پارلیمان کا پہلا اجلاس مئی میں ہوا تھا۔

ایرانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق پارلیمان کے آٹھ اور ارکان بھی کرونا وائرس کا شکار ہوئے ہیں۔اپریل کے اوائل تک سابقہ پارلیمان کے 23 ارکان اس نئے مہلک وائرس سے متاثر ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ اب تک ایرانی نظام کے 17 اعلیٰ عہدے دار کووِڈ-19 سے وفات پاچکے ہیں۔ ان میں فوجی کمانڈر ، علماء اور سیاست دان شامل ہیں۔سابق پارلیمان کے دو ارکان فاطمہ رہبر اور محمد علی رمضانی بھی کرونا وائرس سے چل بسے تھے۔

ایران میں سوموار تک کرونا وائرس کے 259652 کیسوں کی تصدیق کی گئی ہے۔ ان میں 13032 افراد کی اموات ہوچکی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں