.

ترکی: سروے طیارہ گر کر تباہ ، 7 عسکری اہل کار ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی میں سرکاری میڈیا کے مطابق ملک کے مشرقی حصے میں فوج کا ایک سروے طیارہ گر کر تباہ ہو گیا۔ حادثے میں 7 ترک عسکری اہل کار اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی اناضول کے مطابق وزیر داخلہ سلیمان صویلو نے جمعرات کے روز بتایا کہ یہ حادثہ بدھ کی شب آرتوس کے پہاڑوں میں پیش آیا۔

وزیر داخلہ کے مطابق مذکورہ علاقے میں طیارے کا رابطہ منقطع ہونے کے بعد وہ 2200 میٹر کی بلندی سے نیچے آ گرا۔ طیارے میں دو ہواباز اور پانچ تکنیکی اہل کار سوار تھے۔

وزیر داخلہ سلیمان صویلو نے جائے حادثہ کا دورہ بھی کیا۔

حادثے کا شکار ہونے والا طیارہ 2015 میں تیار ہوا تھا۔ یہ طیارہ پیر کے روز سے وان صوبے اور کرد اکثریتی صوبے ہیکارے میں سروے اور نگرانی کے مشن پر تھا۔

ہیکارے صوبے کی عراق کے ساتھ مشترکہ سرحد ہے۔ یہاں کئی دہائیوں سے جاری بغاوت کے دوران ترکی کی فوج اور مسلح کردوں کے درمیان متعدد بار جھڑپیں ہو چکی ہیں۔

ترکی کی حکومت نے حادثے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ یاد رہے کہ ترکی میں سروے طیارہ گرنے کا یہ پہلا حادثہ نہیں ہے۔