.

شاہ سلمان کامیاب سرجری اورمکمل صحت یابی کے بعد اسپتال سے محل منتقل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز کو مکمل صحت یاب ہونے کے بعد ڈاکٹروں نے اسپتال سے جانے کی اجازت دے دی ہے اور وہ جمعرات کی شب واپس شاہی محل منتقل ہوگئے ہیں۔

شاہ سلمان کا گذشتہ ہفتے کامیاب سرجری کے بعد پتا نکال دیا گیا تھا۔ وہ الریاض میں واقع شاہ فیصل اسپیشلٹ اسپتال میں زیرعلاج تھے۔ وہ صحت یابی کے بعد اسپتال سے خود پیدل چل کر اپنی سواری تک گئے ہیں۔

انھیں معمول کے طبی معائنے کے لیے 20 جولائی کو اس اسپتال میں داخل کیا گیا تھا اور ڈاکٹروں نے ان کے مکمل ٹیسٹوں کے بعد ان کا پتا نکالنے کے لیے سرجری کا فیصلہ کیا تھا۔

شاہی دیوان نے 23 جولائی کو ایک بیان میں بتایا تھا کہ خادم الحرمین الشریفین کی لیپرو اسکوپی کے ذریعے سرجری کی گئی ہے۔جراحی کے اس عمل میں بالعموم چھوٹےکیمرے استعمال کیے جاتے ہیں اور یہ عمل مریض کے لیے کوئی زیادہ تکلیف دہ نہیں ہوتا۔

شاہی معالجین نے انھیں مکمل صحت یاب ہونے تک مزید کچھ روز کے لیے اسپتال ہی میں ٹھہرنے کا مشورہ دیا تھا۔ شاہ سلمان نے اپنےعلاج کے دوران میں اسپتال میں سعودی عرب کی وزارتی کونسل کے ایک ورچوئل اجلاس کی صدارت بھی کی تھی۔

شاہی دیوان کے مطابق خادم الحرمین الشریفین نے عرب اور مسلم دنیا کے ان تمام رہ نماؤں اور قائدین کا شکریہ ادا کیا تھا جنھوں نے ان کی فون پر خیریت دریافت کی،ان کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا اور جلد صحت یابی کی دعا کی۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بھی گذشتہ جمعرات کو سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلی فون پر گفتگو کی تھی اور ان سے شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی خیریت دریافت کی تھی۔