.

عراق نژاد مسیحی کلدانی خاتون ہالہ جربو امریکا میں وفاقی جج مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی سینیٹ نے سوموار کے روز عراق نژاد مسیحی کلدانی خاتون ہالہ یلدہ جربو کو امریکا کی ایک ضلعی عدالت میں وفاقی جج مقرر کرنے کا اعلان کیا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مارچ میں ریاست مشی گن کے مغربی ضلع کی ڈسٹرکٹ کورٹ کی جج نامزد کیا تھا اور امریکی سینیٹ کی عدالتی کمیٹی نے ان کے تقرر کی توثیق کردی ہے۔

بغداد میں امریکی سفارت خانے نے فیس بُک پر اپنے صفحے پر یہ اطلاع دی ہے کہ ’’ہالہ جربو پہلی کلدانی امریکی ہیں، جنھیں وفاقی جج نامزد کیا گیا تھا۔ وہ عراق کے علاقے تل کیف میں پیدا ہوئی تھیں اور پھر اپنے والدین کے ساتھ نقل مکانی کرکے امریکا منتقل ہوگئی تھیں۔‘‘

وہ اس سے پہلے ریاست مشی گن کے چھٹے عدالتی سرکٹ میں جج تعینات تھیں۔وہ مشی گن کے مشرقی ضلع میں امریکی اٹارنی جنرل کے دفتر میں اسسٹنٹ اٹارنی کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دے چکی ہیں۔

وائٹ ہاؤس کے ایک بیان کے مطابق وہ منشیات ، آتشیں ہتھیاروں کے جرائم ، بچوں پر مجرمانہ جنسی حملوں ،ان کی مخرب الاخلاق تصاویر اور فلموں اور منشیات کی اسمگلنگ سے متعلق مقدمات میں سرکاری وکیل کی حیثیت سے پیش ہوتی رہی ہیں اور اس کے بعد جج کی حیثیت سے اسی نوعیت کے مقدمات کی سماعت کرتی رہی ہیں۔

وہ آک لینڈ کاؤنٹی میں پراسیکیوٹر کے دفتر میں بھی معاون وکیل استغاثہ کی حیثیت سے خدمات انجام دے چکی ہیں اور آک لینڈ یونیورسٹی میں پڑھاتی بھی رہی ہیں۔

ہالہ جربو کی اس وقت عمر انچاس سال ہے۔ وہ اعلیٰ تعلیم یافتہ ہیں۔انھوں نے مشی گن یونیورسٹی سے بیچلرآف بزنس ایڈمنسٹریشن کی ڈگری حاصل کی تھی اور اس کے بعد وائن اسٹیٹ یونیورسٹی کے لا اسکول سے قانون میں ڈاکٹریٹ کی ڈگری اعزاز کے ساتھ حاصل کی تھی۔