.

یو اے ای ،اسرائیل میں خوراک اور آبی ضمانت کے منصوبوں میں تعاون پرتبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی وزیر مملکت اور اسرائیل کے وزیر زراعت نے خوراک اور پانی کی ضمانت کے منصوبوں میں تعاون سے متعلق تبادلہ خیال کیا ہے۔

دونوں وزراء نے جمعہ کو ٹیلی فون پر دوطرفہ تعاون کے فروغ پر بات چیت کی تھی لیکن امارات نے اتوار کو ایک سرکاری بیان میں اور خاتون وزیر نے خود ایک ٹویٹ میں اس فون کال کے بارے میں بیان جاری کیا ہے۔

یو اے ای کی وزیر مملکت برائے خوراک اور آبی ضمانت مریم بنت محمد المہیری اور اسرائیل کے وزیر زراعت ایلن شوستر نے خوراک اور آبی ضمانت کے منصوبوں میں تعاون کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

یواے ای اور اسرائیل کے درمیان 13 اگست کو تاریخی امن معاہدہ طے پایا تھا اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے خود اس کا اعلان کیا تھا۔اس کے تحت دونوں ملک اب بتدریج دوطرفہ سفارتی ، سیاسی اور تجارتی تعلقات استوار کرنے کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

اس ضمن میں اسرائیل سے پہلی تجارتی پرواز سوموار کی صبح متحدہ عرب امارات میں پہنچ رہی ہے۔اس پرواز میں امریکی ، اسرائیلی وفد سوار ہوگا۔اس کی قیادت امریکا کی جانب سے وائٹ ہاؤس کے مشیر جیرڈ کوشنر کررہے ہیں۔

کوشنر نے آج ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’اب دوسری عرب ریاستون کے لیے بھی اسٹیج سیٹ ہے۔ وہ بھی یو اے ای اور اسرائیل کے درمیان امن معاہدے کی پیروی کریں۔‘‘

لیکن انھوں نے ایسا کوئی اشارہ نہیں دیا ہے کہ مستقبل قریب میں کون سا اور عرب ملک اسرائیل کے ساتھ کوئی امن سمجھوتا طے کررہا ہے۔ البتہ حال ہی میں سوڈان اور اسرائیل کے درمیان سفارتی روابط کی اطلاعات بھی سامنے آئی ہیں۔