.

خلیجی ممالک اپنے فیصلوں میں خود مختار اور آزاد ہیں: ڈیوڈ شنکر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مشرق قریب کے امور کے لیے امریکی وزیر خارجہ کے معاون ڈیوڈ شنکر کا کہنا ہے کہ "خلیجی ممالک اپنے فیصلوں میں خود مختار اور آزاد ہیں"۔

ڈیوڈ نے اتوار کے روز کویت میں ایک پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ "جیرڈ کشنر خطے کا دورہ کریں گے"۔

امریکی معاون نے باور کرایا کہ ان کے کویت کے دورے کے دوران لبنان کا معاملہ بھی زیر بحث آئے گا۔ ڈیوڈ کے مطابق وہ متعدد امور پر بات چیت کے لیے لبنان کا دورہ کریں گے۔

ڈیوڈ نے مزید کہا کہ "ہم نے ایران پر ہتھیاروں کی پابندی میں توسیع کا مطالبہ کیا تھا .. روس اور چین نے اس حوالے سے ہمیں مایوس کیا ہے .. لہذا ہم ایران کو ہتھیاروں کے استعمال سے روکنے کے لیے ہر طریقہ اختیار کریں گے"۔

ڈیوڈ نے واضح کیا کہ اگر ایران پر عائد ہتھیاروں کی پابندی میں توسیع نہ ہوئی تو خطہ (مشرق وسطی) اس سے زیادہ خطرے میں پڑ جائے گا جتنا ہم ابھی دیکھ رہے ہیں۔

یاد رہے کہ ڈیوڈ شنکر نے رواں ماہ 28 اگست سے اپنے مشرق وسطی کے دورے کا آغاز کیا تھا۔ وہ اس دوران کویت، قطر اور لبنان جائیں گے۔ امریکی وزارت خارجہ نے جمعے کے روز اعلان میں بتایا تھا کہ ان کا دورہ 4 ستمبر تک جاری رہے گا۔

طے شدہ پروگرام کے مطابق امریکی وزیر خارجہ کے معاون 2 ستمبر کو لبنان کے دارالحکومت بیروت پہنچیں گے۔ وہاں وہ سول سوسائٹی کے نمائندوں سے ملاقات کریں گے۔ اس دوران ڈیوڈ شنکر 4 اگست کو بیروت کی بندرگاہ پر ہونے والے دھماکے کے بعد امریکی امداد کے سلسلے میں ہونے والی کوششوں پر بھی بات چیت کریں گے۔

امریکی وزارت خارجہ کے مطابق ڈیوڈ شنکر لبنانی قیادت لپر زور دیں گے کہ لبنانی عوام کی خواہش کے مطابق اصلاحات پر عمل درامد کیا جائے تا کہ شفافیت اور پوچھ گچھ کے علاوہ بدعنوانی سے پاک حکومت کو یقینی بنایا جا سکے۔