.

سوڈان میں 17 سال سے جاری خانہ جنگی کے خاتمے کا معاہدہ طے پا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوڈان کی حکومت اور انقلابی محاذ میں شامل چار مسلح تنظیموں کے درمیان تاریخی معاہدہ طے پا گیا ہے جس کے تحت سوڈان میں گذشتہ سترہ سال سے جاری خانہ جنگی کے خاتمے کی راہ ہموار ہونے جا رہی ہے۔

سوڈان کی سرکاری نیوز ایجنسی'سونا' کے مطابق حکومت او مسلح گروپوں کے درمیان طے پائے معاہدے کا عرب اور عالمی سطح‌ پر خیر مقدم کیا گیا ہے۔ اس معاہدے پر دستخط آج سوموار کے روز جنوبی سوڈان کے دارالحکومت جوبا میں ہوں‌ گے۔

نیوز ایجنسی 'سونا' کے مطابق معاہدے میں شامل فریقین سترہ سالہ خانہ جنگی کے خاتمے کے 8 نکاتی معاہدے کی منظوری دیں گے۔ اس معاہدے میں سلامتی، زمین کے تنازع، منصفانہ انتقال اقتدار، متاثرین کے لیے معاوضے، مویشیوں اور زراعت پیشہ آبادی کی ترقی، وسائل کی تقسیم اور اقتدار اور اختیارات میں پناہ گزینوں کو شامل کرنے جیسے نکات شامل ہیں۔

توقع ہے کہ اس معاہدے پر سوڈان کے عبوری وزیراعظم عبداللہ حمدوک، جنوبی سوڈان کے صدر سلفاکیر، عسکری گروپوں کے نمائندے اور غیر ملکی رہ نما بھی دستخط کریں کریں‌ گے۔

انقلابی محاذ جس نے معاہدے کو قبول کیا ہے میں مغربی دارفر میں لڑنے والی تحریکوں کے اتحاد، جنوبی کردفان ریاست اور نیل الارزق ریاست کی قیادت شامل ہو گی۔ شمالی سوڈان کے وزیراعظم حمدوک کل اتوار کو ایک اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ جوبا پہنچ چکے ہیں۔