.

کرونا وائرس: سعودی ائیرلائنز کی مملکت میں آنے والے مسافروں کے لیے رہ نما ہدایات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قومی فضائی کمپنی نے مملکت میں آنے والے بین الاقوامی مسافروں کے لیے جمعرات کے روز کووِڈ-19 کی وَبا سے متعلق رہ نما ہدایات جاری کی ہیں۔

السعودیہ ائیر لائنز نے کرونا وائرس کی وَبا پھیلنے کے بعد مارچ سے اپنی بین الاقوامی پروازیں بند کررکھی ہیں۔اس نے مستقبل قریب میں ان پروازوں کی بحالی کی صورت میں یہ نئی ہدایات جاری کی ہیں اور تمام بین الاقوامی مسافروں کے لیے ان کی پاسداری لازمی قرار دی ہے۔

کمپنی کے اعلامیے کے مطابق فضائی سفر بحال ہونے کے بعد سعودی عرب میں آنے والے تمام مسافروں کو سات روز تک اپنے گھروں میں الگ تھلگ رہنا ہوگا۔البتہ شعبہ طب میں کام کرنے والے عملہ کو اس پابندی میں جزوی چھوٹ دی گئی اور انھیں تین روز تک قرنطین میں رہنا ہوگا لیکن اس کی یہ شرط ہوگی کہ تنہائی کے اس عرصے کے بعد ان کا پی سی آر کا ٹیسٹ ہوگا اور اس کے نتائج منفی ہونے چاہییں۔ مثبت نتائج کی صورت میں انھیں مزید قرنطین میں رہنا ہوگا۔

بین الاقوامی مسافروں کو سعودی عرب میں ہوائی اڈے پر آمد کے بعد اعلان صحت کا ایک فارم پُرکرنا ہوگا۔پھر اس دست خط شدہ فارم کو بین الاقوامی ہوائی اڈوں ہی پر قائم کیے گئے ہیلتھ کنٹرول سنٹر میں جمع کرانا ہوگا۔

ان تمام مسافروں کو سعودی عرب میں کووِڈ-19 کی نگرانی کے لیے استعمال ہونے والی وزارتِ صحت کی دو موبائل ایپس تطمن اور توکلنا کو ڈاؤن لوڈ کرنا ہوگا اور ان پر اپنے ناموں کا اندراج کرانا ہوگا۔

سعودی ائیرلائنز کے مطابق تطمن ایپلی کیشن پر مہمان مسافروں کو اپنی آمد کے آٹھ گھنٹے کے اندر گھر کے محل وقوع (لوکیشن) کا اندراج کرنے کی ضرورت ہوگی۔ وہ پھر روزانہ اس پر اپنی صحت سے متعلق جائزے کا اندراج کرنے کے پابند ہوں گے۔

مسافروں کو یہ بھی ہدایت کی گئی ہے کہ اگر ان میں کووِڈ-19 کی کوئی بھی علامات، جیسے خشک کھانسی اور بخار وغیرہ ظاہر ہوں تو وہ کسی قریبی مرکزِ صحت سے رجوع کریں اور ان علامات کے ظاہر ہونے کے بعد937 نمبر پر کال کریں۔

سعودی حکام نے ابھی تک مملکت میں بین الاقوامی پروازوں کی آمد ورفت کی بحالی کی کوئی تاریخ مقرر نہیں کی ہے۔ تاہم سعودی عرب نے اگست میں اپنی زمینی سرحدیں کھول دی تھیں اور اپنے شہریوں اور ان کے خاندان کے غیر سعودی ارکان کو ملک میں لوٹنے کی اجازت دے دی تھی۔

قبل ازیں سعودی حکومت نے اپنی دو فضائی کمپنیوں کو 31 مئی سے اندرون ملک پروازیں چلانے کی اجازت دے دی تھی۔وہ اب مختلف شہروں کے درمیان پروازیں چلا رہی ہیں۔ یادرہے کہ سعودی عرب نے مارچ میں کرونا کی وبا پھیلنے کے بعد اندرون ملک پروازیں معطل کردی تھی اور صوبوں کے درمیان سفر بھی پابندی عاید کردی تھی۔