برطانیہ کے ہسپتالوں میں کرونا کے مریضوں کی تعداد ہر آٹھ دن بعد دوگنی!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

برطانیہ کے وزیر صحت کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں کرونا وائرس ایک بار پھر تیزی کے ساتھ پھیل رہا ہے اور ہر آٹھ دن بعد ہسپتالوں میں موجود کرونا کے مریضوں کی تعداد دوگنی ہو جاتی ہے۔ اس موقع پر انہوں نے اگلے ماہ میں لاک ڈائون لگانے کے حوالے سے کوئی بات نہیں کی۔

امریکا کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے اعدادو شمار کے مطابق برطانیہ دنیا بھر میں کرونا وائرس سے ہونے والی اموات میں پانچواں بڑا ملک ہے۔کرونا وائرس سے دنیا بھر میں سب سے زیادہ اموات بترتیب امریکا، برازیل ، بھارت اور میکسیکو میں ہوئی ہیں۔

برطانوی وزیر صحت میٹ ہینکوک نے اگلے ماہ میں کسی ممکنہ لاک ڈائون سے متعلق سوال پر مقامی برطانوی ٹی وی چینل سکائی نیوز کو بتایا کہ لاک ڈائون کرونا وائرس کے خلاف آخری ہتھیار کے طور پر استعمال کیا جائے گا۔

ہینکوک کا کہنا تھا کہ "ہسپتالوں میں کرونا کے مریضوں کی تعداد ہر آٹھ روز بعد دوگنی ہوتی جارہی ہے۔ ہم لوگوں کی حفاظت کے لئے ہر ممکن قدم اٹھائیں گے۔برطانوی حکومت ہر طرح کی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔"

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کو کرونا وائرس کے آغاز میں برطانوی حکومت کی جانب سے سستی دکھانے پر حزب اختلاف کے سیاستدانوں کی جانب سے تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

برطانیہ میں اب تک کرونا وائرس سے 41 ہزار 705 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں