چین کی ٹرمپ پر جوابی تنقید، امریکا پر 'یو این' میں'سیاسی وائرس' پھیلانے کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے جنرل اسمبلی میں 'کویڈ 19' پھیلانے میں چین کو قصور وار ٹھہرانے کے الزام کے جواب میں بیجنگ نے امریکی صدر کو جوابی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ اقوام متحدہ میں تعینات چینی سفیر نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے کرونا وائرس پھیلانے کے الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکا اقوام متحدہ کے فورم پر 'سیاسی وائرس' پھیلانے کی کوشش کر رہا ہے۔

اقوام متحدہ میں چین کے سفیر جانگ جون نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ ایسے وقت میں جب بین الاقوامی برادری کوویڈ 19 کے خلاف لڑ رہی ہے امریکا یہاں ایک سیاسی وائرس پھیل رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین کے خلاف امریکا کی جانب سے ان بے بنیاد الزامات کو چین سختی سے مسترد کرتا ہے۔ امریکی شوروغل جنرل اسمبلی کے ماحول کے مطابق نہیں ہے۔

ان کا یہ بیان چین کے خلاف ٹرمپ کے بیانات کے جواب میں سامنے آیا ہے کیوں کہ امریکی صدرنے بیجنگ پر کرونا وائرس کی پھیلانے کی اجازت دینے کا الزام عائد کیا۔ وہ باربار اسے “چینی وائرس” قرار دیتے رہےہیں اور کہا ہے کہ چین نے پوری دنیا میں‌ یہ وائرس پھیلایا مگر اس کے خطرات کے بارے میں قبل از وقت مطلع نہیں‌ کیا گیا۔

وائٹ ہاؤس میں ایک ویڈیو ٹیپ تقریر میں انہوں نے کویڈ 19 کے بحران کا حوالہ دیتے ہوئے چین کو اپنے اقدامات کا جوابدہ ٹھہرانا چاہیئے۔ امریکا اس وبا سے 200،000 اموات کی دہلیز کو عبور کر چکا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ چینی حکومت اور عالمی ادارہ صحت آپس میں ملے ہوئے ہیں۔ ڈبلیو ایچ او عالمی نہیں چینی ادارہ بن چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں