.

ایران کے خلاف پابندیوں کی خلاف ورزی کرنے والوں کو بھی سزا دیں گے: واشنگٹن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ میں امریکی مندوبہ کیلی کرافٹ نے 'العربیہ' کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن مشرق وسطی کے خطے میں امن کا حصول چاہتا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ایران پر پابندیوں کی خلاف ورزی کرنے والے کسی بھی ملک کو سزا دی جائے گی۔

کرافٹ نے مزید کہا کہ واشنگٹن ایران کو اسلحہ فراہم کرنے والے کسی بھی ملک پر پابندیاں عاید کرے گا۔

اقوام متحدہ میں امریکی مندوبہ کا کہنا تھا کہ ایرانی حکومت دہشت گردی کو اقتدار میں رہنے کے لیے استعمال کررہی ہے۔
پیر کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے ایرانی وزارت دفاع اور دیگر افراد پر نئی پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا۔ یہ عہدیدار ایران کے جوہری ہتھیاروں کے پروگرام میں کردار ادا کرتے ہیں۔

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نےامریکی قومی سلامتی کی ٹیم کے سینیر ممبران کی موجودگی میں صحافیوں کو بتایا کہ واشنگٹن نے بھی وینزویلا کے صدر نکولس مادورو پر نئی پابندیاں عائد کی ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ کاراکاس اور تہران کے مابین قریبی تعلقات قائم کر رکھے ہیں۔

پیر کے روز صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کے خلاف امریکی پابندیوں کی خلاف ورزی کرنے والی کمپنیوں کو بھی سزا دینے کے حوالے سے ایک نئے آرڈر پر دستخط کیے تھے۔ ایران کو روایتی ہتھیاروں کی فراہمی ، فروخت اور ان کی منتقلی میں معاونت کرنے والے کسی بھی ملک ، کمپنی یا فرد کے خلاف سخت اقتصادی پابندیاں عائد کی جائیں گی۔

پومپیو نے مزید کہا کہ تقریبا دو سالوں سے تہران میں بدعنوان اہلکار وینزویلا میں غیر قانونی حکومت کے ساتھ مل کر اقوام متحدہ کی طرف سے عاید ہتھیاروں کی پابندی کو روکنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔

اتوار کے روز امریکا نے کہا کہ ایران کے پاس ایسا مواد موجود ہے جو سال کے آخر تک اسے جوہری بم بنانے کے قابل بناسکتا ہے۔ امریکا نے ایران کے جوہری پروگرام سے متعلق 27 افراد اور اداروں کے خلاف پابندیوں پر دستخط کرنے کا اعلان کیا ہے۔