.

آذربائیجان: کاراباخ کی لڑائی میں 28 ترک نواز شامی جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آذربائیجان اور آرمینیا کی فوجوں کے درمیان جاری جھڑپوں کے نتیجے میں کم از کم 28 ترک نواز شامی جنگجو ہلاک ہو گئے ہیں۔

برطانیہ میں قائم مانیٹرنگ گروپ شامی آبزرویٹری برائے انسانی حقوق نے بتایا ہے کہ ہلاک شدگان کا تعلق ان 850 جنگجوئوں کے دستوں سے ہے جو کہ ترکی کی جانب سے آذربائیجان کی مدد کے لئے بھیجے گئے تھے۔

ہلاک ہونے والے جنگجوئوں میں سے تین کے عزیز و اقارب نے عالمی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ان کے عزیز آذربائیجان میں لڑتے ہوئے جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ علاوہ ازیں جھڑپوں میں ہلاک ہونے والے دیگر چار جنگجوئوں کی تصاویر سوشل میڈیا پر شائع ہوگئی تھی۔

آرمینیائی حکومت نے بارہا ترکی پر الزام لگایا ہے کہ وہ آذربائیجان کی مدد کرنے کے لئے شامی جنگجوئوں کو بھیج رہا ہے۔ اس موقف کو ترکی اور آذربائیجان نے بار بار مسترد کیا ہے۔

فرانسیسی صدر عمانویل میکروں نے بھی جمعہ کے روز ترکی سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ ترکی کے راستے سے جہادی جنگجوئوں کی آذربائیجان آمد کی وضاحت کرے۔

فرانسیسی صدر کا کہنا تھا کہ خفیہ اطلاعات کے مطابق شامی شہر حلب کے جہادی گروپس میں سے 300 جنگجو ترک شہر گزینتپ سے گزر کر آذربائیجان میں داخل ہوئے ہیں۔