.

ڈریں نہیں آپ لوگ کرونا کو شکست دے کر رہیں گے: ٹرمپ امریکی عوام سے مخاطب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ والٹر ریڈ ملٹری ہسپتال میں 4 روز گزارنے کے بعد منگل کے روز وائٹ ہاؤس واپس لوٹ آئے ہیں۔ البتہ وہ کوویڈ 19 وائرس سے متاثر ہونے کے بعد ابھی تک مکمل طور پر صحت یاب نہیں ہوئے ہیں۔

واپسی کے فورا بعد ٹرمپ نے ایک وڈیو پیغام کے ذریعے ہم وطنوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ "باہر نکلیں" مگر "محتاط اور خبردار" رہتے ہوئے۔ یہ پیغام ٹرمپ نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر پوسٹ کیا۔ اگرچہ اب تک 2.10 لاکھ امریکی شہری کرونا کے سبب موت کا شکار ہو چکے ہیں تاہم امریکی صدر کا کہنا ہے کہ "آپ لوگ اس سے خوف نہ کھائیں ، آپ اسے شکست دیں گے ... آپ لوگ اس وائرس کو اپنی زندگیوں پر غالب نہ ہونے دیں ، باہر نکلیں اور احتیاط کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑیں"۔

ٹرمپ کے مطابق انہوں نے وائرس کے خلاف "مدافعت" حاصل کر لی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ اب وہ کافی بہتر ہیں۔

امریکی صدر نے عوام سے کہا کہ "جب میں وائرس سے متاثر ہوا تو میں اس کا مقابلہ کرنے میں فرنٹ لائن پر تھا۔ آپ لوگوں کے قائد ہونے کی حیثیت سے مجھ پر لازم تھا کہ میں قیادت سنبھالے رکھوں اور میں نے ایسا ہی کیا۔ مجھے معلوم تھا کہ یہ خطر ناک ہے مگر کوئی بات نہیں"۔

ٹرمپ کے مطابق "ہمارے پاس دنیا میں بہترین دوائیں موجود ہیں۔ ہر چیز بہت تیزی سے ہو رہی ہے۔ اس حوالے سے ویکسینز بھی ہر دم منظوری کے واسطے آ رہی ہیں"۔

یاد رہے کہ ٹرمپ نے جمعے کے روز اپنے اور اپنی اہلیہ کے کرونا وائرس سے متاثر ہونے کا اعلان کیا تھا۔ اس سے چند گھنٹے قبل امریکی صدر نے اپنی مشیر ہوپ ہیکس کے اس وبائی مرض میں مبتلا ہونے کی تصدیق کی تھی۔

ایسا لگتا ہے کہ امریکی صدر کو یہ وائرس ان کی خاتون مشیر ہوپ ہیکس کے ذریعے منتقل ہوا جو گذشتہ منگل اور بدھ کے روز کلیف لینڈ کے سفر میں ٹرمپ کے ساتھ ان کے طیارے میں سوار تھیں۔ ٹرمپ پہلے صدارتی مناظرے کے سلسلے میں کلف لینڈ گئے تھے۔ اس کےعلاوہ انہیں مینی سوٹا میں انتخابی مجمع میں بھی شریک ہونا تھا۔

دو روز قبل ٹرمپ کے ڈاکٹروں نے کہا تھا کہ ان کی حالت بہتری کی جانب گامزن رہی تو وہ دو روز میں وائٹ ہاؤس واپس لوٹ سکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں