.

موڈیز نے سعودی عرب میں مقامی سکوک کو بلند ترین کریڈٹ ریٹنگ دے دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بین الاقوامی کریڈٹ ریٹنگ ایجنسی "موڈیز" نے سعودی حکومت کی جانب سے مقامی سطح پر سعودی ریال میں جاری بونڈز کو (Aaa.sa) ڈگری کی ہائی ریٹنگ دی ہے۔

سعودی وزیر خزانہ محمد الجدعان کے مطابق یہ ریٹنگ مملکت کی معیشت کی مضبوطی اور عالمی اقتصادی چیلنجوں کا سامنا کرنے کے حوالے سے مملکت کی قدرت کی عکاسی کرتی ہے۔ ساتھ ہی یہ مالیاتی اور اقتصادی پالیسیوں میں بنیادی ڈھانچے سے متعلق اصلاحات کو بھی ظاہر کر رہی ہے۔ ان کا مقصد اقتصادی نمو اور اس کا دوام ہے۔

الجدعان نے باور کرایا کہ کریڈٹ ریٹنگ ایجنسیوں کی جانب سے اس نوعیت کی مثبت درجہ بندی سعودی معیشت کو حاصل وسیع اعتماد کی تصدیق ہے۔ حکومت ویژن 2030ء کی روشنی میں مقررہ اہداف کو پورا کرنے کی سمت سفر جاری رکھے ہوئے ہے۔ اس کا مقصد 2030ء تک مملکت کو دنیا کے سب سے بڑے مالیاتی مراکز میں لا کھڑا کرنا ہے۔

سعودی عرب میں قرضوں کے انتظامی امور سے متعلق قومی مرکز کے چیف ایگزیکٹو فہد السیف کے مطابق مملکت کے لیے جاری(Aaa.sa) ریٹنگ جو سرمایہ کاری کے حوالے سے بلند ترین درجہ بندی ہے ،،، یہ مقامی سطح پر Debt Markets کی گہرائی کی عکاس ہے۔

السیف نے باور کرایا کہ یہ ریٹنگ مملکت کے اندر سرمایہ کاروں اور نجی سیکٹر کی کمپنیوں کی دل چسپی میں اضافے کے ساتھ مقامی سطح پر جاری بونڈز کی اعلی کریڈٹ ساکھ کو ظاہر کرتی ہے۔ کرونا وائرس کے سبب دنیا بھر میں درپیش چیلنجنگ صورت حال کے باوجود مملکت کے اندر سرمایہ کاری کو محفوظ قرار دیا جا رہا ہے۔

توقع ہے کہ مقامی پیمانے پر حالیہ کریڈٹ ریٹنگ سے بین الاقوامی سرمایہ کاروں کی مقامی Debt Markets کی طرف توجہ اور دل چسپی کو سپورٹ حاصل ہو گی۔

واضح رہے کہ 29 ستمبر 2019ء کو ایک رپورٹ میں "موڈیز" ایجنسی نے باور کرایا تھا کہ سعودی حکومت گذشتہ تین برسوں کے اندر مقامی سکوک مارکیٹ کو "زیرو پوائںٹ" سے اعلی سطح تک لے جانے میں کامیاب رہی ہے اور مزید بہتری کے لیے کام کیا جا رہا ہے۔