.

اسرائیل قطر کو امریکی ایف 35 لڑاکا جیٹ کی فروخت کی مخالفت کرے گا: انٹیلی جنس وزیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے امریکا کی طرف سے قطر کو ایف 35 لڑاکا جیٹ کی فروخت کی مخالفت کا اعلان کردیا ہے۔اسرائیل کے انٹیلی جنس وزیر ایلی کوہن نے اسرائیلی آرمی ریڈیو سے گفتگو کرتے ہوئے اس مخالفت کا یہ جواز بیان کیا ہے کہ ’’خطے میں صہیونی ریاست کی فوجی بالادستی برقرار رہنی چاہیے۔‘‘

ایلی کوہن سے رائیٹرز کی ایک حالیہ رپورٹ پر تبصرہ کرنے کے لیے کہا گیا تھا۔اس میں بتایا گیا ہے کہ قطر نے امریکا سے جدید ایف 35 لڑاکا طیارے خرید کرنے کے لیے باضابطہ طور پر درخواست دے دی ہے۔

ان سے جب کہا گیا کہ کیا اسرائیل اس سودے کی مخالفت کرے گا تو کوہن نے کہا: ’’اس کا جواب ہاں میں ہے،خطے میں ہماری فوجی اور سکیورٹی برتری ہمارے لیے بڑی اہمیت کی حامل ہے۔ہمارا یہ خطہ ابھی سوئٹزر لینڈ میں تبدیل نہیں ہوا ہے۔‘‘

قطر نے اگست میں امریکا اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ایک سمجھوتا طے پانے کے بعد ایف 35 لڑاکا طیارے خرید کرنے کی درخواست کی ہے۔اس ڈیل کے تحت امریکا نے یو اے ای کو لڑاکا جیٹ فروخت کرنے کا معاملہ زیرغور لانے سے اتفاق کیا تھا۔واضح رہے کہ یہ ڈیل یو اے ای اور اسرائیل کے درمیان طے شدہ تاریخی ’معاہدۂ ابراہیم‘ کا حصہ تھی۔