میں اب کووِڈ-19 کا مریض نہیں رہا: امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کا مکمل صحت یابی کا دعویٰ

سوموار سے انتخابی ریلیوں میں جانےکااعلان، اعلیٰ ٹیسٹوں اورمعیارات کو پاس کرلیا،میں اب محفوظ ہوں: انٹرویو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فاکس نیوز سے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ وہ اب کووِڈ-19 کے مریض نہیں رہے ہیں اور ان سے اس مہلک وائرس کی کسی اور شخص کو منتقلی کا خطرہ بھی نہیں رہا ہے۔

انھوں نے سوموار سے امریکا بھر میں اپنی انتخابی ریلیوں میں شرکت کا اعلان کیا ہے۔انھوں نے بتایا کہ ان کے ٹیسٹوں سے ظاہر ہوتا ہے،وہ اپنی انتخابی مہم چلانے کے لیے تیار ہیں اور ان سے دوسروں کو اس مہلک وائرس کی منتقلی کا بھی کوئی خطرہ لاحق نہیں رہا ہے۔

امریکی صدر نے فاکس نیوز چینل سے انٹرویومیں مزید کہا کہ ’’میں نے اعلیٰ ترین ٹیسٹوں اور معیارات کو پاس کر لیا ہے اور میں بہت بہتر حالت میں ہوں۔بظاہر یہ لگتا ہے کہ میں اب محفوظ ہوں اور میں تہ خانے (بیسمنٹ) سے باہر جاسکتا ہوں۔‘‘

صدر ٹرمپ کے معالج نے بھی ہفتے کے روز کہا تھا کہ ان سے کسی اور فرد میں کرونا وائرس کی منتقلی کا کوئی خطرہ نہیں رہا ہے۔ البتہ انھوں نے یہ نہیں بتایا تھا کہ آیا صدر کا کرونا وائرس کا ٹیسٹ منفی آگیا ہے۔

وہ کووِڈ-19 کا شکار ہونے کے بعد ہفتے کے روز پہلی مرتبہ عوام میں بغیر ماسک نمودار ہوئے تھے۔انھوں نے وائٹ ہاؤس کی بالکونی سے جنوبی لان میں جمع ہونے والے اپنے سیکڑوں حامیوں کو مخاطب کیا تھا اور کہا تھا کہ ’’میں نمایاں بہتری محسوس کررہا ہوں۔‘‘

انھوں نے اپنی مختصر تقریر میں کہا:’’میں آپ سے یہ کہنا چاہتا ہوں کہ ہماری قوم اس خوف ناک ’چائنا وائرس‘ کو شکست سے دوچار کرنے والی ہے۔‘‘انھوں نے ایک مرتبہ پھر کروناوائرس کو چائنا وائرس کو قرار دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں