.

یو اے ای: ایک دن میں کرونا وائرس کے سب سے زیادہ 1315 کیسوں کا اندراج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں کرونا وائرس کی وَبا پھیلنے کے بعد سے منگل کے روز سب سے زیادہ کیسوں کی تشخیص ہوئی ہے اور حکام نے کووِڈ-19 کے 1315نئے مریضوں کے اندراج کی اطلاع دی ہے۔

یو اے ای میں ایک دن میں پہلی مرتبہ کووِڈ-19 1300 سے زیادہ کیس سامنے آئے ہیں۔اس سے پہلے چاراکتوبر کو سب سے زیادہ 1231 کیس ریکارڈ کیے گئے تھے۔اس طرح ملک میں اب کرونا وائرس کے کل تصدیق شدہ کیسوں کی تعداد 108608 ہوگئی ہے۔ان میں سے 100007 مریض صحت یاب ہوچکے ہیں۔

یواے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام نے آج 1452 مریضوں کے صحت یاب ہونے کی بھی اطلاع دی ہے جبکہ اس مہلک وائرس کا شکار دو افراد چل بسے ہیں۔اب یو اے ای میں کووِڈ-19 سے اموات کی تعداد 448 ہوگئی ہے۔

اس نے مزید بتایا ہے کہ گذشتہ 24 گھنٹے میں کرونا وائرس کے 96989 نئے ٹیسٹ کیے گئے ہیں اور ان میں سے مذکورہ نئے کیسوں کی تشخیص ہوئی ہے۔

قبل ازیں گذشتہ روز روس میں تیار کردہ کووِڈ-19 کی ویکسین کی متحدہ عرب امارات میں انسانوں پر دوسری آزمائشی جانچ کا اعلان کیا گیا ہے۔سپوتنک پنجم نامی اس ویکسین کا پہلا انسانی ٹرائل بیلارس میں کیا گیا ہے۔

روسی حکومت نے اگست میں اس ویکیسن کی ملک میں استعمال کی منظوری دی تھی۔اس وقت اس کی ماسکو میں چالیس ہزار رضاکاروں پر آزمائش کی جارہی ہے۔یو اے ای کی وزارت صحت نے ملک میں اس کے ٹرائل کی منظوری دے دی ہے۔اس عمل کو مقامی لیبارٹری ’پیورہیلتھ ‘عملی جامہ پہنائے گی جبکہ روس کا خود مختار دولت فنڈ بیرون ملک کرونا وائرس کی اس ویکسین کی مارکیٹنگ کا ذمہ دار ہے۔

امارات کے وزیر صحت عبدالرحمان بن محمد الاویس کا کہنا ہے کہ ’’ملک میں متنوع آبادی رہ رہی ہے اور دو سو سے زیادہ اقوام کے افراد مقیم ہیں،اس لیے یہاں ویکسین کا آزمائشی تجربہ سود مند رہے گا۔‘‘

دریں اثناء امارت دبئی کے محکمہ صحت نے بڑے خریداری مراکز میں کووِڈ-19 کے پی سی آر ٹیسٹ شروع کرنے کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ اب دبئی کے امارات مال ، سٹی سنٹر میردیف اور سٹی سنٹر دیرہ میں کرونا وائرس کے ٹیسٹ کرائے جاسکتے ہیں۔