.

سعودی عرب : کبارعلماء کونسل اور شوریٰ کونسل کی تشکیلِ نو

الشیخ عبداللہ آل الشیخ سعودی عرب کی نوتشکیل شدہ شوریٰ کونسل کے سربراہ اور الشیخ غیہب الغیہب شاہی دیوان کے مشیرمقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ایک شاہی فرمان کے ذریعے شیخ عبدالعزیز آل الشیخ کے زیر قیادت مملکت کے کبارعلماء کونسل اور شوریٰ کونسل کی تشکیلِ نو کی ہے۔

اس فرمان کے مطابق الشیخ عبداللہ بن محمد بن ابراہیم آل الشیخ کو سعودی عرب کی نوتشکیل شدہ شوریٰ کونسل کا نیا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔ان کا عہدہ وزیر کے برابر ہوگا۔نئی شوریٰ کونسل ڈیڑھ سو ارکان پر مشتمل ہوگی اور اس کی مدت چار سال ہوگی۔

شاہی فرمان کے تحت ڈاکٹر مشعل بن فہم السلمی کو شوریٰ کونسل کا نائب صدر مقرر کیا گیا ہے۔ڈاکٹر حنان بنت عبدالرحیم بن مطلق الاحمدی اس کونسل کی اسسٹنٹ چیئرمین ہوں گی۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ایک اور شاہی فرمان کے ذریعے خالد بن عبداللہ بن محمد اللحیدان کو مملکت کی عدالت عظمیٰ کا نیا سربراہ مقرر کیا ہے۔ان کا منصب وزیر کے برابر ہوگا۔

سعودی عرب کی نوتشکیل شدہ کبارعلماء کونسل کے سربراہ مفتیِ اعظم الشیخ عبدالعزیز بن عبداللہ آل الشیخ ہوں گے۔اُن سمیت یہ کونسل اکیس ارکان پر مشتمل ہوگی۔

شاہ سلمان نے ایک اور فرمان کے تحت الشیخ غیہب بن محمد بن عبداللہ الغیہب کو شاہی دیوان کا مشیر مقرر کیا ہے۔ان کا مرتبہ وزیر کے برابر ہوگا۔