.

'جی 20' ممالک کا انسداد بدعنوانی کے تمام معاہدوں کی اہمیت اوران پرعمل درآمد پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عالمی 'جی 20' نے انسداد بدعنوانی کے لیے طے پانے والے تمام بین الاقوامی معاہدوں پرعمل درآمد پر زور دیا ہے۔

جی 20 کے انسداد بدعنوانی کے وزراء نے بدعنوانی کے خاتمے کے لیے موجودہ بین الاقوامی فریم ورک خاص طور پر بدعنوانی کے خلاف اقوام متحدہ کے کنونشن (یو این سی اے سی) بین الاقوامی تنظیمی جرائم کے خلاف اقوام متحدہ کے کنونشن (یو این ٹی او سی) اور اقتصادی تعاون اور ترقی کے تنظیم (او ای سی ڈی) کے معاہدے، بین الاقوامی تجارتی لین دین اور اس سے متعلق دستاویزات میں غیر ملکی سرکاری عہدیداروں کی رشوت سے نمٹنے اور فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے معیارات پرعمل درآمد پر زور دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق 'جی 20' ممالک میں بدعنوانی کے خلاف کے وزراء کے وزارتی اجلاس میں آئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ کے مطابق جمعرات کو سعودی عرب کی انسداد بدعنوانی اتھارٹی کے سربراہ مازن بن ابراہیم الکھموس کی زیرصدارت ہونےوالے اجلاس میں 'جی 20' کے مندوبین نے شرکت کی۔ ورچوئل اجلاس میں سعودی عرب کے وزیر انصاف اور جوڈیشل کونسل کے سربراہ الشیخ ڈاکٹر ولید بن محمد الصمعانی اور پراسیکیوٹر جنرل الشیخ سعود بن عبداللہ المعجب، گروپ کےعلاقائی اور عالمی سطح پر ارکان کے وفود نے شرکت کی۔

اجلاس کے آخر میں جاری کردہ بیان میں 'جی 20' کے تمام رکن ممالک نے بدعنوانی کی تمام شکلوں کے خلاف اقدامات کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ایک ایسے وقت میں جب دنیا کرونا وائرس (کوویڈ 19) وبا کے نتیجے میں غیر مسبوق معاشی اور معاشرتی مشکلات سے گذر رہی ہے۔ ہم بدعنوانی کے بڑھتے ہوئے خطرات اور اس خطرے سے معاشی نمو پائیدار ترقی ، سرمایہ کاری کے معیار اور جدت پر پڑنے والے خطرناک اثرات کی روک تھام پر زور دیتے ہیں۔

بیان میں‌ وزراء نے سال 2019 اور 2020 کے دوران جی 20 ممالک کے انسداد بدعنوانی ایکشن پلان کی کی توثیق کی اور کہا کہ 2020 کے دوران مملکت نے انسداد بدعنوانی کی قومی حکمت عملیاں تیار کر نے اور ان پر عمل درآمد میں نمائندگی کرتے ہیں۔عوامی شعبے میں سرمایہ کاری بڑھانے کے لیے انفارمیشن اور مواصلاتی ٹیکنالوجی کے فروغ نجکاری کے عمل اور عوامی نجی شراکت کو یقینی بنانے کے اقدامات کیے گئے۔

وزراء نے بدعنوانی سے نمٹنے کے لئے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لیے عالمی آپریشن نیٹ ورک کے قیام کے ریاض کے اقدام کا خیرمقدم کیا۔ بین الاقوامی تعاون کے میدان میں موجودہ پلیٹ فارم اور نیٹ ورکس کی تکمیل کے لیے عالمی اداروں کے کردار کو سراہا۔ اس ضمن میں گلوبل لاء انفورسمنٹ نیٹ ورک (جی ایل ای این) اور لاء انفورسمنٹ آفیشل نیٹ ورک (ایل ای او) ) اقتصادی تعاون اور ترقی کی تنظیم اور (انٹرپول) نیٹ ورک کے ساتھ ساتھ جی 20 ممالک کے لئے بدعنوانی سے نمٹنے سے متعلق احتساب رپورٹ کے نئے نقطہ نظر کا خیرمقدم کیا۔