حوثیوں کے سعودی عرب پر حملے بین الاقوامی قوانین کی صریح خلاف ورزی ہے: الحجرف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

خلیج تعاون کونسل کے سکریٹری جنرل نائف الحجرف نے حوثیوں کی جانب سے دھماکا خیز ڈرون طیاروں کے ذریعے سعودی عرب میں شہریوں کو نشانہ بنانے کا سلسلہ جاری رہنے کی مذمت کی ہے۔

بدھ کی شب جاری بیان میں الحجرف نے باور کرایا کہ سعودی عرب پر کیے جانے والے یہ حملے بین الاقوامی قوانین اور روایتوں کی صریح خلاف ورزی ہے۔ یہ حملے خلیج تعاون کونسل کے رکن ممالک کے امن اور خطے کے امن و استحکام کے لیے خطرہ ہیں۔

الحجرف کے مطابق تعاون کونسل کے ممالک کا امن و استحکام کلّی طور پر جزو لا ینفک ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اپنے امن و استحکام کی حفاظت کے واسطے جو اقدامات کر رہا ہے خلیج تعاون کونسل ان تمام اقدامات کی تائید کرتی ہے اور اس حوالے سے مملکت کے ساتھ کھڑی ہے۔

کونسل کے سیکریٹری جنرل نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ حوثیوں کی جانب سے خطے کے امن و استحکام کو متزلزل کرنے کی مسلسل کوششوں کے سامنے ڈٹ کر کھڑی ہو۔

اس سے قبل عرب اتحاد نے بدھ کو یمن سے ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں کے سعودی عرب کی جانب داغے گئے ایک بیلسٹک میزائل اور چھ مسلح ڈرونز کو تباہ کر دیا۔

عرب اتحاد کے مطابق حوثی ملیشیا نے بارود سے لدے ان ڈرونز کے ذریعے سعودی عرب کے شہری علاقوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی جب کہ بیلسٹک میزائل سعودی عرب کے جنوبی شہر جازان کی جانب داغا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں