.

مائیکروسوفٹ نے میونخ کانفرنس اور سعودی سمٹ پر ایران کے سائبرحملوں کا سراغ لگا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مائیکرو سوفٹ کارپوریش نے ’فاسفورس‘ نامی شخص/ اشخاص کے پے درپے سائبرحملوں کا سراغ لگانے اور انھیں روکنے کی کوشش کی اطلاع دی ہے۔امریکی کمپنی نے اس کو ’’ایرانی کردار‘‘ قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ اس نے ایک سو سے زیادہ اعلیٰ شخصیات کو اپنے سائبر حملوں میں نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔

مائیکروسوفٹ نے ایک بلاگ میں لکھا ہے کہ ’’ایرانی کردار فاسفورس نے آیندہ ہونے والی میونخ سکیورٹی کانفرنس اور سعودی عرب میں تھنک 20 (ٹی 20) کانفرس کے شرکاء کو نشانہ بنانے کی کوشش کی ہے۔اس نے یہ حملے انٹیلی جنس معلومات کے مقصد کے لیے کیے ہیں۔‘‘

اس نے مزید لکھا ہے کہ ’’حملہ آور ممکنہ شرکاء کو ای میل کے ذریعے جعلی دعوت نامے بھیجتے رہے ہیں۔ان ای میلز میں بالکل درست انگریزی زبان لکھی گئی تھی اور یہ سابق حکومتی عہدے داروں ، پالیسی ماہرین ، اکیڈیمکس اور غیر سرکاری تنظیموں کے عہدے داروں کو بھیجی گئی تھی۔‘‘فاسفورس نے کووِڈ-19 کی وبا کے دوران میں خوف وہراس پھیلانے کی بھی کوشش کی ہے اور ممکنہ شرکاء کو ریموٹ سیشنز کی پیش کی ہے۔

مائیکروسوفٹ نے اس یقین کا بھی اظہار کیا ہے کہ فاسفورس یا اس کی حالیہ سرگرمی کا کسی بھی طرح امریکا میں ہونے والے آیندہ صدارتی انتخابات سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں