.

جوبائیڈن امریکا کے چھیالیسویں صدر منتخب،ڈونلڈ ٹرمپ شکست سے دوچار

کمالا ہیرس امریکا کی پہلی سیاہ فام اور جنوب ایشیائی نژاد خاتون نائب صدر منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں منعقدہ صدارتی انتخابات میں ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار جوزف بائیڈن نے موجودہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو شکست سے دوچار کردیا ہے اور وہ امریکا کے چھیالیسویں صدر منتخب ہوگئے ہیں۔

جوبائیڈن کی ساتھی امیدوار کمالاہیرس امریکا کی پہلی خاتون نائب صدر منتخب ہوگئی ہیں۔انھوں نے ٹرمپ کے ساتھی امیدوار مائیک پینس کو شکست سے دوچار کیا ہے۔وہ امریکا کی پہلی سیاہ فام اور جنوب ایشیائی خاتون نائب صدر بھی ہیں۔

78 سالہ جو بائیڈن نے الیکٹورل کالج کے 538 میں سے 284 ووٹ حاصل کیے ہیں۔ انھیں جیت کے لیے 270 ووٹ درکار تھے۔ موجود صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 214 ووٹ حاصل کیے ہیں۔جوبائیڈن امریکا کے سب سے معمر صدر ہوں گے۔

ان کے حریف ڈونلڈ ٹرمپ 1992ء کے بعد ری پبلکن پارٹی کے پہلے صدر ہیں جو دوبارہ منتخب نہیں ہوسکے ہیں۔تب ری پبلکن صدر جارج ایچ ڈبلیو بش ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار بل کلنٹن کے مقابلے میں ہار گئے تھے۔کلنٹن کے بعد جارج بش اور براک اوباما دو، دومرتبہ امریکا کے منتخب صدر رہ چکے ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ امریکا کی تمام ریاستوں سے انتخابی نتائج سامنے آنے تک اپنی جیت کا دعویٰ کرتے رہے ہیں۔ان کی انتخابی مہم نے تین ریاستوں پینسلوانیا ، مشی گن اور جارجیا میں انتخابی عذرداریاں دائر کردی ہیں اور ریاست ویسکونسن میں بھی ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا مطالبہ کیا ہے۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی شکست کے بعد عدالت عظمیٰ سے رجوع کرنے کا اعلان کیا ہے۔ انھوں نے الیکشن میں اپنی جیت اور اپنے حریف امیدوار کے حق میں ہزاروں نامعلوم ووٹ پڑنے سے متعلق ٹویٹر پر بہت سے دعوے کیے تھے لیکن مائکروبلاگنگ کی اس ویب سائٹ نے ان کی متنازع ٹویٹس کو ہٹا دیا تھایا ان میں سے بعض کے ساتھ انتباہ جاری کیا تھا کہ ’’اس ٹویٹ کا تمام یا بعض مواد متنازع اور الیکشن یا کسی دوسرے شہری عمل سے متعلق گمراہ کن ہوسکتا ہے۔‘‘

جو بائیڈن تین ریاستوں پینسلوینیا ،ویسکونسن اور مشی گن میں بھی جیت گئے ہیں۔اس کے بعد ان کے الیکٹورل کالج کے ووٹوں کی تعداد 264 ہوگئی ہے۔انھیں جیت کے لیے الیکٹورل کالج کے کل ووٹوں 538 میں سے 270 ووٹ درکار ہیں۔ان کے حریف ری پبلکن پارٹی کے امیدوار موجودہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ اب تک 214 ووٹ حاصل کرسکے ہیں۔

امریکا کے انتخابی نظام کے تحت تمام پچاس ریاستوں اور ضلع کولمبیا کو ان کی آبادی کے تناسب سے 538 الیکٹورل ووٹ الاٹ کیے گئے ہیں۔ان میں واضح برتری حاصل کرنے والا امیدوار صدر امریکا ٹھہرتا ہے۔جوبائیڈن اپنے حریف ری پبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ سے ملک بھر میں مقبول عام ووٹ میں بھی آگے رہے ہیں اور انھوں نے اب تک صدر ٹرمپ سے کوئی 30 لاکھ زیادہ ووٹ حاصل کیے ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے 2016ء میں منعقدہ صدارتی انتخابات میں اہم مسابقتی ریاستوں میں زیادہ ووٹ حاصل کیے تھے اور وہ الیکٹورل کالج میں زیادہ ووٹ حاصل کرنے کی وجہ سے جیت گئے تھے جبکہ ان کی حریف ڈیمو کریٹک صدارتی امیدوار ہلیری کلنٹن نے ان سے ملک بھر میں 30 لاکھ مقبول عام زیادہ ووٹ حاصل کیے تھے۔