.

میں تمام امریکیوں کا صدر ہوں گا: جو بائیڈن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے نو منتخب صدر جو بائیڈن نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ امریکیوں کو متحد کریں گے اور ملک میں دراڑ کو بھرنے کی کوشش کریں گے۔

انہوں نے یہ بات صدارتی انتخابات میں جیت کے بعد اپنے حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ امریکا میں صدارتی انتخابات منگل کے روز ہوئے تھے۔ بائیڈن کے یہ حامی ریاست ڈیلاویئر کے شہر ویلمنٹگن میں اکٹھا ہوئے تھے۔ بائیڈن کا کہنا تھا کہ "امریکا میں اب صحت یابی کا وقت آ گیا ہے۔ میں وعدہ کرتا ہوں کہ ایسا صدر بنوں گا جو تقسیم پر نہیں بلکہ متحد کرنے پر کام کرے گا"۔ بائیڈن کے مطابق "صدر ٹرمپ کے حامی ہمارے دشمن نہیں، یہ لوگ امریکی ہیں"۔

نو منتخب صدر نے عہد کیا کہ وہ ایک بار پھر امریکا کو دنیا میں محترم بنائیں گے۔ انہوں نے باور کرایا کہ وقت آ گیا ہے کہ عداوت کی زبان سے دوری اختیار کی جائے۔

بائیڈن نے وعدہ کیا کہ وہ متوسط طبقے کو پھر سے اوپر لانے پر کام کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم روزگار کے مواقع پیدا کریں گے اور عزت نفس کی حفاظت کریں گے۔

بائیڈن نے کرونا وائرس پر قابو پانے کے واسطے کام کرنے پر زور دیا۔ انہوں نے باور کرایا کہ معیشت میں جان ڈالنے کے لیے ہر چیز سے پہلے اس وبا پر قابو پانا ہو گا۔

بائیڈن کا کہنا تھا کہ انہوں نے 7.4 کروڑ سے زیادہ امریکیوں کے ووٹ حاصل کیے ہیں۔ ان کے مطابق نئی امریکی انتظامیہ نائب صدر کے عہدے پر پہلی خاتون کو منتخب کر کے تاریخ رقم کرے گی۔ یہ خاتون کمالا ہیرس ہیں۔

اس سے قبل ہفتے کی شام ایک ٹویٹ میں بائیڈن کا کہنا تھا کہ "میں تمام امریکیوں کا صدر بنوں گا۔ امریکیوں نے مجھ پر اور منتخب خاتون نائب صدر پر جس اعتماد کا اظہار کیا ہے وہ میرے لیے اعزاز ہے"۔

واضح رہے کہ امریکی ذرائع ابلاغ کے اہم اداروں نے گذشتہ روز ڈیموکریٹک امیدوار جو بائیڈن کی صدارتی انتخابات میں موجودہ ریپبلکن صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف کامیابی کا اعلان کیا تھا۔ اس مرتبہ پوری دنیا کی جانب سے غیر معمولی طور پر امریکی انتخابات پر نظریں مرکوز تھیں۔