.

ٹرمپ کے وکلا پنسلوینیا میں انتخابی نتائج کے خلاف اپیلوں سے دست بردار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سبکدوش ہونے والے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے وکلاء نے ریاست پنسلوینیا میں صدارتی انتخابات کے نتائج کے خلاف اپیلوں میں اپنی نمائندگی سے دستبرداری اختیار کرلی ہے۔

خبر رساں ادارے 'رائیٹرز' کے مطابق جمعہ کے روز صدر ٹرمپ کے وکلا نے کہا کہ یہ اقدام اپیلوں کی فزیبلٹی پر اختلاف رائے کے بعد سامنے آیا ہے۔

انہوں نے اس خدشے کا بھی اظہار کیا کہ نتائج چیلنج کرنے سے جمہوری عمل کی سالمیت پر سوال اٹھائے جائیں گے۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ امریکا میں ہونے والے صدارتی انتخابات اور اس کے نتائج کے ساتھ ہونے والی الجھن کے باوجود امریکی الیکشن حکام نے جمعہ کے روز میں اس بات کی تردید کی تھی کہ صدارتی انتخابات کے دوران ووٹوں کے گمشدگی یا ترمیم یا انتخابی نظام میں نقائص کے ثبوت موجود ہیں۔

الیکشن کمیشن کے حکام نے خاص طور پر ہوم لینڈ سیکیورٹی کے محکمہ سائبر سیکیورٹی اور انفراسٹرکچر سکیورٹی ایجنسی سمیت ایک مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ 3 نومبر کو امریکی تاریخ کے سب سے محفوظ انتخابات ہوئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ بھی انتخابی نظام میں‌ کوئی نقائص ہیں۔ ووٹ ضائع ہونے یا نتائج میں تبدیلی کا کوئی ثبوت نہیں۔

امریکی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ اگرچہ ہم جانتے ہیں کہ ہمارے انتخابی عمل کو بہت سے الزامات کا سامنا ہے، لیکن ہم آپ کو یقین دلاتے ہیں کہ ہمیں اپنے انتخابات کی سلامتی اور سالمیت پر مکمل اعتماد ہے۔