سعودی عرب کووِڈ-19 کو ترقی کاعمل پیچھے لے جانے کی اجازت نہیں دے گا: وزیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعوی عرب کووِڈ-19 کو ترقی کے عمل کو پیچھے لے جانے کی اجازت نہیں دے گا۔

یہ بات سعودی عرب کے وزیر مملکت فہد المبارک نے سوموار کے روز الریاض میں آیندہ ہفتے گروپ 20 کے سربراہ اجلاس سے قبل میڈیا بریفنگ میں کہی ہے۔انھوں نے کہا کہ ہم اپنے مکمل ایجنڈا پر عمل درآمد میں کامیاب رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمیں اس سال جی 20 کی صدارت کا اعزاز بخشا گیا تھا،ہم نے یہ بہت مصروف سال گزارا ہے اور وزراء اور ارکان پارلیمان کے سیکڑوں اجلاسوں کی میزبانی کی ہے۔

پریس ریلیز کے مطابق جی 20 کا سربراہ اجلاس ہفتہ 21 نومبر کو شروع ہوگا۔شاہ سلمان بن عبدالعزیز ورچوئلی گروپ 20 کے لیڈروں کا خیرمقدم کریں گے۔

دریں اثناء سعودی عرب کے وزیرتجارت اور سرمایہ کاری ماجد القصبی کا کہنا ہے کہ ’’2020ء ایک غیر معمولی سال رہا ہے اور کووِڈ-19 نے پوری دنیا کی معیشت کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے مگر سعودی عرب نے گروپ 20 کے سربراہ کی حیثیت سے قائدانہ کردار ادا کیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ’’ہمیں امید ہے کہ لوگ ذاتی طور پر گروپ کے سربراہ اجلاس میں شرکت کرسکیں گے تاکہ انھیں سعودی عرب سے متعارف کرایا جاسکے۔ہمیں امید ہے کہ یہ آیندہ برسوں میں ہوسکے گا۔‘‘

انھوں نے ایک مرتبہ پھر یہ نشان دہی کی ہے کہ سعودی عرب جی 20 کے سربراہ اجلاس کی میزبانی کرنے والا پہلا عرب ملک ہے۔واضح رہے کہ سعودی حکومت نے ستمبر میں یہ اعلان کیا تھا کہ کرونا وائرس کی وبا کی وجہ سے دنیا کی بیس بڑی معیشتوں کے لیڈر گروپ 20 کے سربراہ اجلاس میں ورچوئل شرکت کریں گے۔

اس سربراہ اجلاس کا تھیم ’’اکیسویں صدی میں سب کے لیے مواقع کو حقیقت کا روپ دینا‘‘ ہے۔سعودی عرب کا کہنا ہے کہ وہ گروپ کے صدر ملک کی حییثیت سے اس تھیم کے مطابق عالمی تعاون کو فروغ دینا چاہتا ہے۔

اس کانفرنس میں جن تین مرکزی موضوعات پر تبادلہ خیال کیا جائے گا،وہ یہ ہیں:

  1. لوگوں کو بااختیار بنانے بالخصوص خواتین اور نوجوانوں کو جینے ، کام کرنے اور آگے بڑھنے کے مواقع مہیا کرنے کے لیے سازگار ماحول پیدا کرنا۔
  2. قدرتی وسائل کو تحفظ مہیا کرکے کرّۂ ارض کو محفوظ بنانا۔
  3. ایجادات اور ٹیکنالوجی کی ترقی کے لیے طویل المیعاد اور دلیرانہ حکمت عملیوں پر عمل درآمد تاکہ نئی سرحدوں کا تعیّن کیا جاسکے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کی مانیٹری اتھارٹی (ساما) نے گذشتہ ماہ جی 20 سربراہ اجلاس کی میزبانی کی یاد گار کے طور پر 20 ریال کا کرنسی نوٹ جاری کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں