.

کرونا:یواے ای میں زایدالمیعاد قیام کرنے والوں کے ویزوں کی رعایتی مدت میں مزیدتوسیع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے زایدالمیعاد قیام کرنے والے غیرملکیوں کے ویزوں کی رعایتی مدت میں 31 دسمبر 2020ء تک توسیع کردی ہے۔

یو اے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام کے مطابق جن غیرملکیوں کے ویزوں کی میعاد یکم مارچ 2020ء سے قبل ختم ہوچکی ہے،انھیں زاید المیعاد قیام پر جرمانوں سے مستثنیٰ قرار دے دیا گیا ہے لیکن اس کی شرط یہ ہوگی کہ وہ ملک سے واپس چلے جائیں۔

یو اے ای کے ڈائریکٹرجنرل برائے غیرملکی امور اور بندرگاہیں میجر جنرل سعید رکن الرشیدی نے کہا ہے کہ اس توسیع کا مقصد خلاف ورزی کے مرتکبین کو سال کے اختتام تک ملک میں رہنے کے قابل بنانا ہے۔

واضح رہے کہ یو اے ای نے اس سال کرونا وائرس کی وبا پھیلنے کے پیش نظر ویزوں کی مقررہ مدت ختم ہوجانے کے بعد زاید المیعاد قیام کرنے والوں کے لیے متعدد مرتبہ رعایتی مدت کے اعلانات کیے ہیں۔

18 اگست کو اماراتی حکومت نے یہ اعلان کیا تھا کہ ملک میں داخلے اور اقامتی قوانین کی خلاف ورزی کے مرتکبین کو تین ماہ کی اضافی رعایتی مدت دی جائے گی اور انھیں زاید المیعاد قیام پر کوئی جرمانہ بھی عاید نہیں کیا جائے گا۔یہ توسیعی مدت آج منگل 17 نومبر کو ختم ہوگئی ہے اور اس کے پیش نظر ہی نیا اعلان کیا گیا ہے۔

بحرین سمیت دوسرے خلیجی ممالک نے بھی کرونا وائرس کی وبا کے پیش نظر زاید المیعاد قیام کرنے والے غیرملکیوں کے ویزوں میں توسیع کردی ہے۔