.

یواے ای سہ فریقی اجلاس؛اردن کے شاہ عبداللہ کی شاہِ بحرین اورابوظبی کے ولی عہد سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اردن کے شاہ عبداللہ دوم نے ابوظبی میں ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل نہیان اور بحرین کے شاہ حمد بن عیسیٰ آل خلیفہ سے ملاقات کی ہے۔انھوں نے باہمی دلچسپی کے امور اور تینوں ملکوں کے درمیان تعلقات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ہے۔

امارات کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام کے مطابق بحرین کے شاہ حمد بن عیسیٰ منگل کے روز ابوظبی پہنچے تھے۔ابو ظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید آل نہیان اور دوسرے اعلیٰ عہدے داروں نے ان کا خیر مقدم کیا۔

بعد میں شیخ محمد نے ان سے ملاقات میں دوطرفہ تعلقات پر بات چیت کی اور بحرین کے وزیراعظم شہزادہ خلیفہ بن سلمان آل خلیفہ کی حال ہی میں وفات پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔

اردن کے شاہ عبداللہ دوم بھی گذشتہ روز ابوظبی پہنچے تھے۔انھیں اس دورے کی دعوت شیخ محمد نے دی تھی۔یو اے ای اور بحرین کے اسرائیل کے ساتھ ستمبر میں امن معاہدوں کے بعد ان کا ابوظبی کا یہ پہلا دورہ ہے۔اردن نے 1994ء میں اسرائیل کے ساتھ امن معاہدہ طے کیا تھا اور سفارتی تعلقات استوار کیے تھے۔

امریکا میں یو اے ای کے سفیر یوسف العتیبہ نے اگست میں ایک مضمون میں لکھا تھا کہ یو اے ای اور اسرائیل کے درمیان امن معاہدے سے اردن کو براہِ راست فائدہ پہنچے گا،اس کے استحکام کو تقویت ملے گی اور وہ خطے میں زیادہ بہتر تزویراتی کردار ادا کرسکے گا۔

اردنی وزیر خارجہ ایمن صفدی نے تب کہا تھا کہ یو اے ای اور اسرائیل کے درمیان ڈیل سے خطے میں امن کی جانب پیش رفت ہوگی لیکن اس کی شرط یہ ہے کہ اسرائیل اس کو فلسطینی سرزمین پر قبضے کے خاتمے کے لیے ایک ترغیب کے طور پر لے۔