.

روایتی لباس میں ملبوس 'جی 20' کے پرچم بردار سعودی کی سوشل میڈیا پر مقبولیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں حال ہی میں ہونے والے 'جی 20' ممالک کے ورچوئل اجلاس کی باز گشت ابھی مدھم نہیں پڑی کہ اس حوالے سے سعودی عرب کے ایک شہری کی سوشل میڈیا پر پذیرائی نے 'جی 20' کے اس اجلاس کی اہمیت کو مزید چار چاند لگا دیے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر ایک مقامی شہری عبدالعزیز الزمیلی کی تصویر وائرل ہوئی جس میں اسے سعودی عرب کے روایتی قومی لباس پہنے اور 'جی 20' اجلاس کا پرچم لہراتے دیکھا جا سکتا ہے۔

الزمیلی نے اپنے مخصوص انداز میں 'جی 20' کو اجاگر کرنے کی کوشش کی ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ سعودی عرب میں عوامی سطح پر اس اجلاس کو کتنی زیادہ اہمیت دی گئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے الزمیلی نے کہا کہ گذشتہ 10 روز سے میں نے مملکت سعودی عرب کے روایتی قومی لباس کو زیب تن کیے رکھا۔ اس کی وجہ صرف یہ نہیں کہ سعودی عرب اس بار'جی 20' ممالک کے سربراہ اجلاس کی میزبانی کر رہا ہے بلکہ یہ لباس ہی ہماری پہچان، ہمارا تشخص، سعودی قوم کی ثقافت ہے۔ انہوں‌نے کہا کہ چغہ، عقال اور بندق ہمارے روایتی لباس کا حصہ ہیں۔

اس نے کہا کہ میں نے حالیہ ایام میں الریاض میں ہونے والی 'جی 20' سمٹ کی سرگرمیوں میں بھی حصہ لیا۔ میں نے اس موقع پر سعودی عرب کے روایتی قومی لباس پہننا زیادہ مناسب سمجھا۔ میں نے اس لباس میں 37 سیکنڈز کی ایک ویڈیو اور تبوک میں اس کی تصاویر بھی بنوائیں۔ اس ویڈیو اور تصاویر کو سوشل میڈیا پر بہت زیادہ پسند کیا گیا۔

ایک سوال کے جواب عبدالعزیز الزمیلی کا کہنا تھا کہ میری ٹیم اور دوسرے تمام ساتھیوں‌ نے'جی 20'سمٹ کے موقعے پر قومی لباس زیب تن کرنےکو بہت زیادہ سراہا اور میری حوصلہ افزائی کی۔