.

ناگورنوقراباغ میں بارودی سرنگ کا دھماکا،چارافراد ہلاک ؛آذربائیجان کا آرمینیا پرالزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متنازع علاقہ ناگورنوقراباغ میں باردوی سرنگ کے دھماکے میں ایک کار سوار میں چار آذری شہری ہلاک ہوگئے ہیں۔آذر بائیجان کے پراسیکیوٹر جنرل نے کہا ہے کہ دھماکے کا سبب بارودی سرنگ آرمینیائی فوج نے علاقے سے پسپا ہوتے ہوئے بچھائی تھی۔

پراسیکیوٹرجنرل کے دفتر نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ واقعہ ضلع فضولی میں واقع ایک گاؤں میں پیش آیاہے۔بارودی سرنگ ٹینک شکن تھی۔اس نے واقعہ کو آرمینیا کی نئی قسم کی اشتعال انگیزی قرار دیا ہے۔

ضلع فضولی ایران کی سرحد کے ساتھ واقع ہے۔یہ ان اضلاع میں شامل ہے جن پر 1990ء کے عشرے میں لڑی گئی جنگ میں آرمینیائی جنگجوؤں نے قبضہ کر لیا تھا۔انھوں نے مزید علاقوں پر کنٹرول کے بعد ناگورنو قراباغ کی آزادی کا اعلان کردیا تھا۔

آذربائیجان کی فورسز نے آرمینیائی فوج کے خلاف حالیہ لڑائی میں ضلع فضولی پر دوبارہ قبضہ کرلیا تھا۔آذری فوج اور آرمینیا کے درمیان یہ لڑائی ستمبر کے آخر میں شروع ہوئی تھی اور یہ چھے ہفتے تک جاری رہی تھی۔اس میں چار ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

روس کی ثالثی کے نتیجے میں دونوں ملکوں نے 9 ستمبر کو جنگ بندی کے ایک سمجھوتے پر دست خط کیے تھے۔اس کے تحت آرمینیا نے آذری فوج کے دوبارہ مفتوحہ علاقوں سے دستبردار ہونے سے اتفاق کیا تھا۔ ان علاقوں پر ناگورنوقراباغ کی علاحدگی پسند انتظامیہ کا گذشتہ تین عشروں سے کنٹرول چلا آرہا تھا۔