.

روس کے میزائل دفاعی نظام ایس-300کی جاپان کے نزدیک واقع متنازع جزیرے میں تنصیب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس نے جاپان کی سرحد کے نزدیک واقع متنازع جزیرے میں اپنا نیا ایس-300 وی 4 میزائل دفاعی نظام نصب کردیا ہے۔روس کے اس اقدام کے بعد اس کی جاپان کے ساتھ کشیدگی میں اضافہ ہوسکتا ہے۔

روس کی وزارتِ دفاع کے زیر اہتمام ٹی وی اسٹیشن فیزدہ نے منگل کے روز اطلاع دی ہے کہ ’’جزیرے اِٹروپ میں موبائل فضائی دفاع نظام نصب کردیا گیا ہے۔اس کا مقصد بیلسٹک اور فضائی حملوں سے تحفظ مہیا کرنا ہے۔‘‘

روس کا اٹروپ سمیت چارجزائر پر کنٹرول ہے جبکہ جاپان بھی ان پر دعوے دار ہے اور وہ انھیں اپنے شمالی علاقے قرار دیتا ہے۔

فیزدہ ٹی وی کی اطلاع کے مطابق ’’سخالین ریجن میں واقع اٹروپ جزیرے میں پہلے ہی شارٹ رینج کا طیارہ شکن میزائل نظام موجود ہے۔اب ’’بھاری توپ خانہ‘‘فضائی دفاعی نظام بھی علاقے میں پہنچ گیا ہے۔یہ بڑا فضائی دفاعی نظام ایس-300 وی 4 ہے۔‘‘

سابق سوویت یونین نے دوسری عالمی جنگ کے خاتمے پر ان چاروں جزائر پر قبضہ کیا تھا۔یہ جنوبی کریلس کے نام سے بھی جانے جاتے ہیں۔سابق سوویت روس کے ان جزائر پر قبضے کے بعد اس کی کئی سال تک جاپان کے ساتھ کشیدگی جاری رہی تھی اور اس کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان ایک باضابطہ امن معاہدہ طے پایا تھا۔

روس نے اکتوبر میں پہلی مرتبہ ان جزائر میں میزائل دفاعی نظام نصب کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن اس کا کہنا تھا کہ اس نظام کے میزائل فوجی مشقوں کا حصہ ہوں گے اور انھیں مستقل طور پر دفاعی فوجی مقاصد کے لیے نصب نہیں کیا جائے گا۔