.

ڈاکٹروں نے سعودی عرب میں کرونا ویکسین کی آمد کی تصدیق کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں بیرون ملک سے کرونا ویکسین کی سپلائی شروع ہوگئی ہے۔ مُتعدی امراض کے کنسلٹنٹ "نزار باہبری" نے سعودی عرب میں نئی کرونا وائرس کی ویکسین آنے کی ضروری تیاریوں کا انکشاف کیا ہے۔ ٹویٹر پر پوسٹ ایک ویڈیو کلپ میں اُنہوں نے تصدیق کی ہے کہ یہ ویکسین ریفریجریٹڈ کنٹینرز میں پہنچے گی جس میں درجہ حرارت منفی 80 درجے سینٹی گریڈ تک رکھا گیا ہے۔

اُنہوں نے بتایا کہ ویکسین کو ڈرائی آئس ٹیکنالوجی کی اہمیت اور کم درجہ حرارت پر ویکسین کی نقل و حمل اور شہریوں تک پہنچانے کی اہمیت پر زور دیا۔

ڈاکٹر باہبری نے مزید کہا کہ ویکسین کو 20 ڈاکٹروں کی قومی کمیٹی کے ذریعہ منظور کیا گیا ہے جس کے بعد شہریوں اور مملکت میں‌ مقیم افراد کو دینے کا عمل یقینی بنایا جائے گا۔

سعودی وزارت صحت کے سکریٹری ڈاکٹر عبد اللہ العسیری نے بتایا کہ سعودی عرب دنیا کےان 20 ممالک میں سے ایک ہے جس نے اتنے کم وقت میں‌ کرونا ویکسین حاصل کی ہے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ حتمی مراحل میں پہنچنے والی تمام اہم ویکسینیں زیرغور ہیں۔ حتمی ٹیسٹوں میں کامیاب ہونے والی کوئی بھی ویکسین حاصل کرنے کے لیے سعودی عرب نے اس گروپ کے ساتھ معاہدہ کرے گا۔