.

موڈیز نے یواے ای کی کریڈٹ ریٹنگ کی توثیق کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دنیا کے ممالک کی مالیاتی نظم ونسق کی بنا پر درجہ بندی کرنے والی بین الاقوامی کمپنی موڈیز نے متحدہ عرب امارات کی کریڈٹ ریٹنگ اے اے2 کو برقرار رکھا ہے اور وہ سب سے زیادہ درجے کا حامل خلیجی ملک بن گیا ہے۔

موڈیز نے ستمبر میں کویت کی کریڈٹ ریٹنگ کو اے اے 2 سے کم کرکے اے1 کرنے کا اعلان کیا تھا۔اس طرح اب یواے ای موڈیز کی درجہ بندی میں پہلے نمبر پر آ گیا ہے۔

یو اے ای کے وزیراعظم اور حاکمِ دبئی شیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے بدھ کو ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ’’متحدہ عرب امارات نے اندرونی استحکام ، دانش مندانہ مالیاتی پالیسیوں ، مضبوط بین الاقوامی تعلقات اور ٹھوس معاشی تنوع کی بدولت اپنی کریڈٹ طاقت حاصل کی ہے۔2020ء کے خاتمے سے قبل یہ اس کی ایک بڑی کامیابی ہے۔‘‘

واضح رہے کہ 19 جون کو موڈیز نے یو اے ای کے آٹھ بنکوں کی درجہ بندی تبدیل کی تھی اور کرونا وائرس کے معیشت پر مرتب ہونے والے منفی اثرات کے پیش نظر ان کا ظاہری اشاریہ مستحکم سے منفی کردیا تھا۔ان بنکوں میں امارات کا این بی ڈی ، ابوظبی کمرشل بنک ، دبئی اسلامی بنک ،مشرق بنک ، ایچ ایس بی سی بنک مڈل ایسٹ ، ابوظبی اسلامی بنک ، نیشنل بنک راس الخیمہ اور نیشنل بنک فجیرہ شامل ہیں۔

تب موڈیز کے ایک ترجمان نے کہا تھا کہ ’’ان بنکوں کی ریٹنگ کی توثیق کی گئی ہے لیکن ان کے ظاہری اشاریہ کو ان کے کریڈٹ پروفائلز کے پیش نظر کم کر دیا گیا ہے۔اس کی وجہ یہ بتائی گئی تھی کہ یو اے ای میں کرونا وائرس کی وبا کے پیش نظر بنک کاری کے لیے ایک مشکل ماحول بن چکا ہے۔اس کے علاوہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی اور پہلے سے موجود اقتصادی چیلنجز بھی اس کا ایک اور سبب ہیں۔