.

سال 2020ء‌ میں 'کویڈ 19' کا شکار ہونے والی چند سرکردہ عالمی شخصیات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی صدرعمانویل میکروں ان نمایاں عالمی شخصیات میں شامل ہوگئے ہیں جو رواں سال کے دوران کرونا کی وبا کا شکار ہوئے۔ کل جمعرات کو فرانسیسی وزارت صحت نے تصدیق کی کہ صدر میکروں کوڈ - 19 کا شکار ہیں۔

کرونا کی وبا نے بلا تفریق ہرچھوٹے بڑے، سرکردہ اور غیر سرکردہ افراد کو اپنے حصار میں لیا ہے۔ فرنسیسی صدر وبا کا شکار ہونے والے پہلے عالمی رہ نما نہیں۔ اسے قبل کئی دوسرے عالمی لیڈر اس وائرس کا شکار ہوچکے ہیں۔ بعض وبا سے لڑتے ہوئے جان کی بازی بھی ہار گئے۔

وبا کے نتیجے میں متاثر ہونے والی سرکردہ شخصیات میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی شامل ہیں۔ 2 اکتوبر کو ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا کہ انہیں اور ان کی اہلیہ میلانیا'COVID-19' کا شکار ہیں۔ تاہم10 روز کے بعد صدر ٹرمپ کا کرونا ٹیسٹ منفی آیا جس کے بعد انہیں اپنی انتخابی مہم جاری رکھنے کی اجازت دے دی گئی۔

سات جولائی کو برازیل کے صدر جیر بولسنارو کا کرونا ٹیسٹ مثبت آیا۔ برازیلی صدر وبا کو زیادہ اہمیت نہ دینے والے رہ نمائوں میں شامل تھے۔ وہ اکثر بغیر ماسک کے لوگوں میں گھل مل جاتے اور صفائی کرنے والے عملے کے پاس موٹرسائیکل پر پہنچ جاتے۔

کرونا کا شکار ہونے والی سرکردہ شخصیات میں برطانوی وزیراعظم بورس جانسن بھی شامل ہیں۔ وہ اپریل کے آخر میں ایک ہفتہ انتہائی نگہداشت میں رہے۔ کرونا کی وجہ سئے سابق اطالوی وزیر اعظم سلویو برلسکونی دس دن اسپتال میں داخل رہے۔

برطانیہ کے ولی عہد شہزادہ چارلس اور موناکو کے شہزادہ البرٹ دوم مارچ میں کوویڈ 19 کا شکار ہوئے ان کی وبا کی علامتیں ہلکی تھیں۔ برطانوی تخت کے وارث نے سات دن تک اسکاٹ لینڈ میں اپنی رہائش گاہ پر تنہائی میں دن گذارے۔ 62 سالہ موناکو کے شہزادہ البرٹ کے دفتر نے ایک بیان میں کہا کہ ٹیسٹوں سے تصدیق ہوئی ہے کہ شہزادہ 19 مارچ کو کرونا وائرس سے متاثر ہوا تھا لیکن ان کی صحت کو کوئی خطرہ نہیں تھا۔

امریکی قومی سلامتی کے مشیر رابرٹ او برائن ، 27 جولائی کو ٹرمپ کے اندرونی دائرے میں سب سے سینیر عہدیدار تھے جنھوں نے اس بیماری سے گذرنا پڑا۔

ایسواٹینی (سابق سوزی لینڈ) کے وزیر اعظم امبروز دلایمنی 13 دسمبر کو 52 سال کی عمر میں‌ اپنے فرائض سنبھالنے والے تھے مگر وبا نے انہیں زیادہ دیر زندہ نہ رہنے دیا۔تشخیص ہونے کے بعد انہیں یکم دسمبر کو جنوبی افریقہ میں اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔
فرانس کے سابق صدر ویلری گیسکارڈ ایس اسٹنگ کوویڈ 19 کے باعث 2 دسمبر کو 94 سال کی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔