.

ایران میں شبِ یلدا کی تقریبات پرکرونا وائرس کی پابندیوں کے دورانیے میں توسیع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں شبِ یلدا کی تقریبات کے موقع پر کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے لوگوں کی نقل وحرکت محدود اور ان کے گھلنے ملنے پرنئی پابندیاں عاید کردی گئی ہیں۔

ایرانی صدر حسن روحانی نے ہفتے کے روز ایک نشری بیان میں کہا ہے کہ ’’ہمیں اکٹھے نہیں ہوناچاہیے،تاکہ ہم بیمار نہ پڑیں۔‘‘انھوں نے ایرانیوں پر زوردیا ہے کہ وہ شبِ یلدا کے موقع پر خاندانی اجتماعات منعقد نہ کریں۔

اس سال ایران میں سردیوں کا قدیم روایتی میلہ اتوار کی شب منعقد ہورہا ہے۔اس موقع پر خاندان روایتی طور پر ساری رات مل بیٹھتے ہیں۔ان کی یہ اجتماعی محفلیں علی الصباح تک جاری رہتی ہیں۔اس دوران میں وہ شعر وشاعری کرتے،گانے گاتے اور ، انار، تربوز اور خشک میوہ جات کھاتے ہیں۔

لیکن اس مرتبہ ایرانی حکومت نے کرونا وائرس کی وَبا کی وجہ سے رات کے اجتماعات پر پابندی عاید کردی ہے اور شام کو پہلے سے مقررہ اوقات سے دو گھنٹے قبل دکانیں بند کرنے کا حکم دیا ہے۔ایران کے نائب وزیر صحت علی رضا رئیسی نے سرکاری ٹیلی ویژن پر ہفتے اور اتوار کی شام چھے بجے دکانیں بند کرنے کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ رات آٹھ بجے سے صبح چار بجے تک ٹریفک کا کرفیو نافذ رہے گا۔اس دوران میں گاڑیوں کی آمد ورفت بند رہے گی۔

دریں اثناء ایران کی وزارت صحت نے اطلاع دی ہے کہ گذشتہ 24 گھنٹے میں کووِڈ-19 کا شکار مزید 175 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔19 ستمبر کے بعد ایک دن میں یہ سب سے کم ہلاکتیں ہیں۔وزارت نے مزید کہا ہے کہ اب تک کووِڈ-19 سے مرنے والوں کی تعداد 53448 ہوگئی ہے۔ایران میں فروری میں کرونا وائرس کی وَبا پھیلنے کے بعد سے 1152072 افراد متاثر ہوئے ہیں۔

علی رضا رئیسی کا کہنا تھا کہ 21 نومبر کو سخت پابندیوں کے نفاذ کے بعد سے کووِڈ سے ہونے والی یومیہ ہلاکتوں میں 50 فی صد کمی واقع ہوچکی ہے۔اس کے علاوہ ایران کے 31 میں سے 30 صوبوں میں کرونا وائرس کے یومیہ کیسوں کی تعداد میں کمی واقع ہوئی ہے لیکن شب یلدا پر اجتماعات کے انعقاد سے ایک مرتبہ پھر اس کے کیسوں کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ یلدا میلے کے بعد ٹریفک پرعاید کردہ پابندیوں کے دورانیے میں مزید کمی کردی جائے گی اور دارالحکومت تہران سمیت کم خطرے کے حامل ’’اورنج‘‘ شہروں میں رات نو بجے سے صبح چار بجے تک ٹریفک پر پابندیاں عاید رہیں گی۔

واضح رہے کہ شبِ یلدا کا میلہ افغانستان ، ازبکستان ، تاجکستان ، ترکمانستان ، آذربائیجان اور آرمینیا میں بھی منایا جارہا ہے۔اس موقع پر اجتماعی تقاریب میں مل بیٹھ کر انار کھانا زندگی کے چکر کی علامت سمجھاجاتا ہے، تربوز صحت کی علامت ہے،خشک میوہ جات اور بادام اخروٹ وغیرہ خوش حالی اور دولت مندی کی علامت قرار دیے جاتے ہیں۔