.

امریکی انتخابات کے ذمے داران کے خلاف مہم کے پیچھے ایران تھا : ایف بی آئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ایجنسیFBI کی ایک نئی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایران نے رواں ماہ کے دوران انٹرنیٹ کے ذریعے مذکورہ ایجنسی کے ڈائریکٹر، ایک سابق امریکی سائبر ماہر اور امریکا میں انتخابات سے متعلق ان متعدد ذمے داران کے خلاف اشتعال انگیزی کی بھرپور کوششیں کیں جنہوں نے وسیع پیمانے پر ووٹرز لسٹ میں جعل سازی کے دعوؤں کو مسترد کر دیا تھا۔ یہ دعوے صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے وفاقی اتحادیوں کی جانب سے سامنے آئے تھے۔ یہ بات منگل کے روز امریکی ذمے داران نے بتائی۔

ایف بی آئی کے ڈائریکٹر کرسٹوفر رے اور داخلہ سیکورٹی کے برطرف کیے گئے ذمے دار کرسٹوفر کریبس ان دس سے زیادہ شخصیات میں شامل ہیں جن کی تصاویر، گھروں کے پتے اور دیگر ذاتی معلومات انٹرنیٹ پر ایک ویب سائٹ پر جاری کیے گئے۔ ویب سائٹ کو "عوام کے دشمن" کا نام دیا گیا۔

ان تمام ذمے داران نے کسی نہ کسی صورت 2020ء کے صدارتی انتخابات کی سیکورٹی پر نظر رکھی تھی۔ ذمے داران کے مطابق انہیں وسیع پیمانے پر جعل سازی کے ثبوت نہیں ملے۔ یہ موقف انتخابات میں جعل سازی کے حوالے سے صدر ٹرمپ کے دعوؤں کی تردید کرتا ہے۔

واشنگٹن پوسٹ اخبار کے مطابق ایران امریکی انتخابات میں مداخلت کے مقصد سے اکتوبر میں سرگرم رہا۔ اس نے جعلی ای میلز کے ذریعے ڈیموکریٹک ووٹرز کو ہدف بنایا۔ ای میلز میں کہا گیا کہ یہ ایک شدت پسند جماعت کی جانب سے بھیجی گئی ہے۔ ساتھ ہی ووٹرز کو دھمکی دی گئی کہ وہ ٹرمپ کے حق میں ووٹ دیں ورنہ انہیں انتقامی کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا۔

کرسٹوفر کریبس جو انتخابات میں جعل سازی کے حوالے سے دعوؤں کے سلسلے میں دو ٹوک بیانات دے رہے تھے ، انہیں ٹرمپ نے گذشتہ ماہ برطرف کر دیا۔ داخلہ سیکورٹی کی وزارت میں سائبر سیکورٹی اور انفرا اسٹرکچر سیکورٹی ایجنسی کے سربراہ کی حیثیت سے کرسٹوفر نے اپنے زیر قیادت کوششوں کو کامیاب بنایا۔ یہ کوششیں سرکاری اور مقامی انتخابی دفاتر کی جانب سے انتخابی نظام کو محفوظ رکھنے اور غلط معلومات کے عدم پھیلاؤ میں معاون ثابت ہوئیں۔

امریکی ایف بی آئی ایجنسی آج بدھ کے روز ایک اعلان جاری کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اس سے قبل ہدف بنائے گئے متعدد ووٹرز کو ایجنسی کی جانب سے موصول ہونے والے بیان میں کہا گیا کہ "ایف بی آئی کے پاس موجود نہایت باوثوق معلومات یہ ظاہر کر رہی ہیں کہ انٹرنیٹ کے ذریعے سرگرم ادارے تقریبا مصدقہ طور پر 'عوام کے دشمن' نامی ویب سائٹ بنانے کے ذمے دار ہیں۔ اس ویب سائٹ پر قتل کی دھمکیاں دی گئیں اور 2020ء کے امریکی انتخابات کے ذمے داران کو ہدف بنایا گیا"۔