.

ایران مشرق وسطیٰ میں امریکی تنصیبات پر حملے کا منصوبہ بنا رہا ہے: واشنگٹن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے الزام عاید کیا ہے کہ ایران مشرق وسطیٰ میں امریکی افواج اور امریکی تنصیبات پر حملوں کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔

این بی سی نیوز نے ایک امریکی عہدے دار کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایران خطے میں امریکی افواج پر حملہ کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔ امریکی عہدیدار کا کہنا ہے کہ مشرق وسطی میں ایران کے ممکنہ حملے کے اشارے ملے ہیں جب کہ 'سی این این' نے ایک امریکی عہدیدار کے حوالے سے کہا ہے کہ وہ نہیں جانتے کہ ایرانی تیاری کسی دفاعی یا جارحانہ مقصد کے لیے ہے۔

یہ بات ایرانی پاسداران انقلاب کی قدس فورس کے سابق کمانڈر قاسم سلیمانی کی برسی کے موقع پر سامنے آئی ہے۔ ایرانی عہدیداروں کے بیانات اور مؤقف میں امریکا سے بدلہ لینے کی باتیں کی جا رہی ہیں۔ ایران کے عسکری عہیدار امریکا کو حملوں کی دھمکیاں دیتے اور بدلہ لینے کی باتیں کرتے ہیں جب کہ ایرانی سیاست دان معمالات ٹھندا رکھنے اور جنگ کے نتائج سے خبردار کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

ایرانی پاسداران انقلاب کے کمانڈر حسین سلامی نے کہا ہے کہ انتقام لینا جاری ہے اور یہ ایک نقطہ تک محدود نہیں ہے۔ حسین سلامی نے قاسم سلیمانی کوہلاک کرنے پر ایران سے سخت بدلہ لینے کے اپنے سابقہ عزم کا اعادہ کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی پاسداران انقلاب موقع ملتے قاسم سلیمانی کے قتل کا بدلہ لے گا۔

جبکہ ایرانی قدس فورس کے کمانڈر اسماعیل قا آنی نے امریکا کے اندر اہداف کو نشانہ بنا کر سلیمانی کے بدلہ لینے کی دھمکی دی۔ ایرانی سپریم لیڈر کے فوجی مشیر حسین دیہقان نے کہا کہ خطے میں تمام امریکی فوجی اڈے ایرانی میزائل رینج میں ہیں۔ انہوں نے ٹرمپ کو مشورہ دیا کہ وہ نئے سال کو امریکیوں کے غم میں تبدیل نہ کریں۔

ایرانی عدلیہ کے سربراہ ابراہیم رئیسی نے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اب محفوظ نہیں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس نے بھی قاسم سلیمانی کو مارا اسے اصل انتقام کا انتظار کرنا چاہیئے۔

تاہم دوسری طرف ایرانی سفارت خانے حالات کو پر سکون بنانے، جنگ سے گریز کرنے اور تہران کو مظلوم ظاہر کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے جمعہ کے روز اپنے کویتی ہم منصب کے ساتھ فون پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ایران جنگ نہیں چاہتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ خطے میں کسی بھی ممکنہ مہم جوئی کے نتائج کا ذمہ دار امریکا ہوگا۔

ظریف نے جمعرات کے روز ایک بیان میں کہا تھا کہ ہمیں عراق سے معلومات ملی ہیں کہ امریکا ایران پر حملے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔