.

ٹرمپ نے کانگریس پر دھاوے اور فسادات کو مسترد کر دیا: وائٹ ہاوس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جمعرات کے روز وائٹ ہاؤس کی ترجمان کائلی مک کینانی نے کانگریس کی عمارت میں ہونے والے فسادات کی مذمت کرتے ہوئے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ صدر ٹرمپ اور ان کی انتظامیہ اس تشدد کی سخت الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔

امریکی عہدیدار نے زور دے کر کہا کہ جن لوگوں نے کانگرس کا محاصرہ کیا وہ ٹرمپ انتظامیہ کی اقدار کی نمائندگی نہیں کرتے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ میں واضح کردوں کیپیٹول کی عمارت میں ہم نے جو تشدد دیکھا وہ خوفناک ، قابل مذمت اور امریکی اقدار کے منافی تھا۔ صدر اور ان کی انتظامیہ نے ان کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے۔

میک کینانی نے کہا کہ کانگریس میں جو کچھ ہوا وہ ناقابل قبول ہے اور قانون کو توڑنے والوں کو کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جانی چاہیے فسادات کرنے والوں کے خلاف مقدمات قائم کیے جانے چاہئیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ الیکٹورل کالج کے نتائج کے مطابق بدھ کے روز ٹرمپ کے حامی مظاہرین نے قانون سازوں کو نو منتخب صدر جو بائیڈن کی فتح کے اعلان سے روکنے کے لیے کانگریس کی عمارت پر دھاوا بول دیا تھا۔ پولیس اور مسلح مظاہرین میں تصادم کے نتیجے میں کم سے کم چار افراد ہلاک اور 50 سے زاید زخمی ہو گئے تھے۔

اس کے علاوہ وائٹ ہاؤس کے ترجمان نے تصدیق کی کہ امریکی انتظامیہ کے عہدے دار اقتدار کی ہموار اور منظم منتقلی کو یقینی بنانے کے لئے کام کر رہے ہیں۔