.

یواے ای :کووِڈ-19کے 3362 نئے کیسوں کی تشخیص، کل تعداد 239587 ہوگئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں کووِڈ-19 کے یومیہ کیسوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹے میں کروناوائرس کے 3362 نئے کیسوں کی تشخیص ہوئی ہےاور اب کل کیسوں کی تعداد 239587 ہوگئی ہے۔

امارات کی وزارتِ صحت نے بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ پہلے سے کووِڈ-19 کا شکار مزید چھے مریض چل بسے ہیں۔اب اس مہلک وائرس سے وفات پانے والوں کی تعداد 723 ہوگئی ہے۔

یواے ای میں حالیہ ہفتوں کے دوران میں کووِڈ-19 کے یومیہ کیسوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور یومیہ ایک ہزار سے تین ہزار تک کیسوں کی تشخیص ہورہی ہے۔

اماراتی حکام نے لوگوں پر زوردیا ہے کہ وہ اس مہلک وائرس سے بچاؤ کے لیے رضاکارنہ طور پر ویکسین لگوائیں۔واضح رہے کہ یو اے ای میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے بیشتر پابندیاں ختم کی جاچکی ہیں لیکن سماجی فاصلہ اختیار کرنے اور عوامی مقامات پر ماسک پہننے کی پابندی برقرار ہے۔دبئی میں حالیہ دنوں میں بڑی تعداد میں غیرملکی سیاحوں کی بھی آمد ہوئی ہے جس کی وجہ سے کرونا وائرس کے کیسوں کی تعداد میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

وزارت صحت نے کرونا وائرس کی ویکسین لگانے کی مہم بھی تیز کردی ہے اوراب تک یواے ای میں ویکسین لگوانے والوں کی شرح فی صد دنیا میں اسرائیل کے بعد دوسرے نمبر پر ہے۔اماراتی حکام کا کہنا ہے کہ وہ رواں سال کی پہلی سہ ماہی میں اپنی 90 لاکھ آبادی میں سے 50 فی صد کو ویکسین لگانا چاہتے ہیں۔

متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور دبئی کے حاکم شیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے گذشتہ روز اپنے پیغام میں کہا تھا کہ ’’ویکسین لگوانا ہر فرد کی معاشرتی ذمے داری ہے تاکہ ان افراد ، ان کے خاندانوں اور پورے معاشرے کی صحت کا تحفظ کیا جاسکے۔‘‘

یواے ای نے چین کے قومی دواساز گروپ سائنو فارم کی تیارکردہ ویکسین کے استعمال کی منظوری دی ہے اور یہ عوام کو لگانے کے لیے دستیاب ہے۔امارت دبئی میں امریکا کی دواساز کمپنی فائزر کی بائیو این ٹیک کے اشتراک سے تیار کردہ ویکسین لگائی جارہی ہے۔

یواے ای میں سائنوفارم کی ویکسین کی تیسرے مرحلے میں آزمائش کی جارہی ہے۔اس کے علاوہ روس کی تیارکردہ ویکسین سپوتنک پنجم کی بھی آزمائشی جانچ کی جارہی ہے۔

اماراتی وزارت صحت نے منگل کے روز کرونا وائرس کے 3243 نئے کیسوں کی تصدیق کی تھی اور اس مہلک وائرس کا شکار چھے افراد وفات پاگئے تھے۔خلیج عرب کے ممالک میں کووِڈ-19 کے یومیہ کیسوں کی یہ سب سے زیادہ تعداد تھی جبکہ باقی پانچ ریاستوں میں 500 سے کم یومیہ کیس رپورٹ ہوئے تھے۔

خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) میں شامل چھے ممالک میں اب تک کرونا وائرس کے 11 لاکھ 20 ہزار سے زیادہ کیسوں کی تشخیص ہوچکی ہے۔سعودی عرب جی سی سی میں آبادی اور رقبے کے اعتبار سے سب سے بڑا ملک ہے اور اس کے ہاں کووِڈ-19 کے سب سے زیادہ 364096 کیس ریکارڈ کیے گئے ہیں لیکن گذشتہ ایک ہفتے سے سعودی عرب میں کرونا وائرس کے یومیہ کیسوں کی تعداد صرف ایک سو کے لگ بھگ رہ گئی ہے۔