.

جو بائیڈن نے 127 سال پرانی انجیل پر حلف کیوں اٹھایا ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں منتخب صدر جو بائیڈن نے بدھ کے روز اپنے منصب کا حلف اٹھایا۔ اس موقع پر بائیڈن نے جس بائبل پر ہاتھ رکھ کر حلف کے کلمات ادا کیے وہ 127 برس سے نئے امریکی صدر کے خاندانی ورثے کے طور پر محفوظ ہے۔

واضح رہے کہ امریکی آئین میں اس بات کا کوئی اشارہ نہیں ملتا جس میں کہا گیا ہو کہ صدر کو کسی مذہبی کتاب پر حلف اٹھانا ہو گا۔ تاہم تاریخی رسم و رواج کے طور پر بائبل 1789ء میں جارج واشنگٹن کے انتخاب کے وقت سے حلف برداری کی تقریبات کا حصہ بن گئی۔

امریکی چینل NBC کی رپورٹ کے مطابق بائیڈن نے جس بائبل پر حلف اٹھایا وہ 1893ء سے ان کے خاندان کے پاس موجود ہے۔ بائیڈن نے اپنے پیشہ وارانہ کیرئر میں ہمیشہ نئے منصب کا حلف اٹھاتے ہوئے اسی بائبل کو استعمال کیا۔ چمڑے کی جلد والی اس بائبل کی موٹائی 12 سینٹی میٹر ہے اور اس پر لوہے کا تالا لگا ہوا ہے۔

بائیڈن کے صدر کی حیثیت سے حلف اٹھانے کے دوران ان کی اہلیہ اور نئی خاتون اول جیل بائیڈن نے مذکورہ بائبل کو تھامے رکھا۔ واضح رہے کہ جان ایف کینیڈی کے بعد جو بائیڈن امریکا کی تاریخ کے دوسرے کیتھولک صدر ہیں۔ کینیڈی نے بھی 1961ء میں صدر کا حلف اپنی خاندانی بائبل پر اٹھایا تھا۔