چِلی: سونامی کی غلط وارننگ سے لوگوں میں خوف و ہراس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

چِلی میں حکام نے سونامی سے متعلق غلط وارننگ جاری کیے جانے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ ہفتے کے روز انٹارکٹیکا میں زلزلے کے بعد لوگوں کو انتباہی پیغام بھیجا گیا تھا جس میں انہیں ساحلی علاقوں سے دُور جانے پر زور دیا گیا۔

ہفتے کی شام چلی میں چند منٹوں کے وقفے سے زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے تھے۔

پہلا زلزلہ انٹارکٹیکا میں جب کہ دوسرا چلی کے دارالحکومت سینٹیاگو کے قریب آیا تھا۔

وزارت داخلہ نے ٹویٹر پر جاری بیان میں بتایا تھا کہ ہفتے کی شام 8:36 پر آنے والے زلزلے کی شدت ریکٹر اسکیل پر 7.1 تھی۔

زلزلے کے بعد وزارت داخلہ نے ملک کے تمام حصوں میں موبائل فون پر بھیجے گئے پیغام میں لوگوں پر زور دیا گیا تھا کہ وہ ساحلی علاقوں سے دور رہیں۔ بعد ازاں وزارت نے بتایا کہ مذکورہ وارننگ غلطی سے بھیج دی گئی۔

وزارت داخلہ کے ایمرجنسی بیورو کے ایک ذمے دار نے پریس کانفرنس میں کہا کہ حکام کو اس پریشانی پر افسوس ہے جس کا سامنا تکنیکی غلطی کے سبب ارسال ہونے والے پیغامات کے سبب لوگوں کو کرنا پڑا۔

ارضیاتی تحقیق کے جرمن مرکز کے مطابق ہفتے کی شب 9:07 پر 5.6 درجے شدت کا دوسرا زلزلہ چلی اور ارجنٹائن کے بیچ سرحدی علاقے میں آیا۔ اس کا مرکز چلی کے دارالحکومت سینٹیاگو سے 30 کلو میٹر مشرق میں تھا۔ زلزلے کی گہرائی 133 کلومیٹر تھی۔

دونوں زلزلوں کے بعد جانی یا مادی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی۔

مقبول خبریں اہم خبریں