.

اسرائیل ۔ سوڈان امن معاہدہ پر واشنگٹن میں دستخط ہوں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل کے محکمہ سراغرسانی کے وزیر ایلی کوہن نے بتایا ہے کہ ان کا ملک سوڈان کے ساتھ تعلقات کو معمول کی راہ پر لانے والے سفارتی معاہدے کو حتمی شکل دینے کی غرض سے اگلے تین مہینوں کے اندر واشنگٹن میں دستخط کی تقریب میں شرکت کرے گا۔

سوڈانی حکام یا اسرائیل میں امریکی سفارتخانے سے اس اعلان سے متعلق فوری ردعمل سامنے نہیں آیا۔

خرطوم کی سویلین حکومت کے مطابق اسرائیل سے تعلقات نارملائز کرنے کا معاہدہ عبوری قانون ساز کونسل کی منظوری کے بعد ہی طے پا سکتا ہے۔ اس عبوری قانون ساز کونسل کی تشکیل ابھی تک نہیں پا سکی۔

متحدہ عرب امارات، بحرین اور مراکش کے بعد سوڈان نے بھی امریکی نگرانی میں گذشتہ برس اسرائیل سے تعلقات نارملائز کرنے پر رضا مندی ظاہر کی تھی۔ جو بائیڈن کی قیادت میں نئی امریکی انتظامیہ ان معاہدوں کی بنیاد پر تعلقات استوار کرنا چاہتی ہے۔

مسٹر کوہن نے ’’وائی نیٹ ٹی وی‘‘ کو بتایا کہ امن معاہدے کا مسودہ تیار کیا جا رہا ہے اور اسرائیل اور سوڈان اگلے تین مہینوں کے دوران واشنگٹن میں ہونے والی ایک تقریب میں اس پر دستخط کر دیں گے۔

کوہن پیر کے روز ایک اسرائیلی وفد کی قیادت کرتے ہوئے سوڈان گئے جہاں انھوں نے نارملائزیشن معاہدے کو آگے بڑھانے سے متعلق مذاکرات کیے۔ انھوں نے وائی نیٹ ٹی وی کو بتایا کہ حکام نے تین اقتصادی منصوبوں سمیت بارڈر سیکیورٹی پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

اسرائیلی انٹیلی جنس چیف سوڈانی میزبانوں کے زیتوں کے تیل اور پھلوں کا تحفہ ساتھ لے کر گئے جبکہ سوڈانی حکام نے انہیں M16 رائفل بطور تحفہ پیش کی ۔