.

کرونا وائرس: سعودی عرب میں پاکستان سمیت 20 ممالک کے شہریوں کے داخلے پرعارضی پابندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے پاکستان سمیت بیس ممالک سے تعلق رکھنے والے شہریوں ، سفارت کاروں ،طبی کارکنوں اور ان کے خاندانوں پر تین فروری رات نو بجے سے مملکت میں داخلے پرعارضی طور پر پابندی عاید کردی ہے۔

سعودی وزارت داخلہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ان بیس ممالک سے تعلق رکھنے والے شہریوں کا داخلہ معطل کرنے کا فیصلہ مملکت میں وَبا کی صورت حال اور صحتِ عامہ کے تحفظ کے پیش نظر کیا گیا ہے۔‘‘

جن ممالک کے شہریوں ، سفارت کاروں ،طبی عملہ کے ارکان اوران کے خاندانوں کے سعودی عرب میں داخلے پرپابندی عاید کی گئی ہے، ان کے نام یہ ہیں: ارجنٹینا، متحدہ عرب امارات ، جرمنی ، امریکا ، انڈونیشیا ، آئرلینڈ ،اٹلی ، پاکستان ، برازیل ، پرتگال ، برطانیہ ، ترکی ، جنوبی افریقا، سویڈن ، سوئٹزرلینڈ ، فرانس ،لبنان، مصر ، بھارت اور جاپان ۔

سعودی وزارت صحت نے منگل کے روز کرونا وائرس کے 310 نئے کیسوں اور چار اموات کی اطلاع دی ہے۔اس طرح مملکت میں اب تک کووِڈ-19 کے تشخیص شدہ کیسوں کی تعداد 368639 ہوگئی ہے۔ان میں سے 6383 وفات پا چکے ہیں۔

سعودی عرب نے گذشتہ جمعہ کو اپنے شہریوں پر عاید سفری پابندیوں میں توسیع کرنے کا اعلان کیا تھا۔اس نے کہا تھا کہ وہ کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے اقدامات کے تحت اب 31 مارچ کے بجائے 17 مئی کو اپنی فضائی ، برّی اور بحری سرحدیں دوبارہ کھولے گا۔