.

سعودی عرب: ای کامرس کے نظام کی خلاف ورزیوں پر 7.4 لاکھ ریال کے جرمانے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی وزارت تجارت نے برقی اشتہارت کے لیے مقررہ ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں پر 7.4 لاکھ ریال کے مالی جرمانے عائد کیے۔ یہ ضوابط ای کامرس کے نظام میں واضح کیے گئے ہیں۔

خلاف ورزی کرنے والے مرد اور خواتین کی مجموعی تعداد 17 ہے۔ ان افراد نے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز مثلا "اسنیپ چیٹ اور ٹویٹر وغیرہ" پر اشتہارات کے دوران خلاف ورزیوں کا ارتکاب کیا۔ خلاف ورزیوں میں متعدد مصنوعات کے بارے میں تفصیلات کو اشتہار کا عنوان نہ دینا اور اور مختلف غذائی اشیاء کے بارے میں جھوٹے دعوے کرنا شامل ہیں۔

سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق وزارت تجارت کی جانب سے متعدد آن لائن شاپس کی بندش کی گئی ہے۔ ساتھ ہی کئی ویب سائٹس کو بلاک بھی کر دیا گیا ہے۔

ای کامرس کے نظام کے تحت برقی تجارتی اشتہارات میں یہ وضاحت شامل ہونا چاہیے کہ مذکورہ مواد "اشتہاری مواد" ہے۔ اسی طرح کسی بھی ایسے ٹریڈ مارک کے بارے میں اشتہار پوسٹ کرنا ممنوع ہے جس کے استعمال کا حق اشتہار دینے والے کے پاس نہ ہو۔

واضح رہے کہ وزارت تجارت برقی اشتہارات کی کڑی نگرانی کرتی ہے۔ ساتھ ہی خلاف ورزیاں کرنے والوں کا کیس متعلقہ کمیٹی کے سامنے پیش کرتی ہے۔ اس دوران ضابطوں کی خلاف ورزیاں ثابت ہونے پر جرمانے عائد کیے جاتے ہیں جن کا حجم لاکھوں ریال تک پہنچ جاتا ہے۔ علاوہ ازیں خلاف ورزی کی مرتکب ویب سائٹس کی بندش عمل میں لائی جاتی ہے۔