.

عمر البشیر کی اہلیہ کی وجہ سے خود مختار کونسل کے رکن کے خلاف قانونی کارروائی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوڈان میں خود مختار عسکری کونسل کے سربراہ عبدالفتاح البرھان اور وائس چیئرمین جنرل محمد حمدان دقلو کی ہدایت پر با اختیار کمیٹی کے رکن صلاح مناع کے خلاف پراسیکیوٹر کی عدالت میں تین الگ الگ مقدمات درج ہیں۔ ان میں الزام عاید کیا گیا ہے کہ صلاح مناع نے معزول صدر عمر البشیر کی اہلیہ وداد با بکر کی جیل سے رہائی پر اعتراض کیا تھا۔

العربیہ کے ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ خود مختار کونسل کے چیئرمین عبد الفتاح البرہان اور کونسل کے وائس چیئرمین محمد حمدان دقلو نے معزول صدر عمر البشیر کی اہلیہ وداد بابکر کی جیل سے رہائی کو غیرقانونی قرار دینے کے بعد ان کے خلاف کے خلاف قانونی کارروائی شروع کی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ صلاح مناع کو کل ہفتے کے روز پراسیکیوٹر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ اس موقعے پر ڈپٹی پراسیکیوٹر تاج السر الحبر نے مناع پرعدالتی کارروائی میں رکاوٹ ڈالنے کا الزام عاید کیا جب کہ سوڈانی فوج کی کمپنی 'زادنا' کی طرف سے بھی ایک پٹیشن دائر کی گئی ہے جس میں صلاح مناع پر منی لانڈرنگ کا الزام عاید کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ وداد بابکر حالیہ برسوں کے دوران 'سند الخیریہ' نامی ایک فلاحی تنظیم کے ذریعے غربت کے خاتمے کے لیے سرگرم رہی ہیں۔ سنہ 2010ء میں بابکر کو سوڈان میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں بھی صدر البشیر کے ہمراہ دیکھا گیا تھا۔ وہ اپنے شوہر کے لیے عوامی حمایت کے حصول کے لیے مختلف ڈھنگ اختیار کرتی رہی ہیں۔ انہوں‌نے عوام کو متوجہ کرنے کے لیے اسپورٹس یونیفارم پہن کر بھی اپنے شوہر کی انتخابی مہم چلائی