.

عراق اور شام میں ایرانی حمایت یافتہ ملیشیائیں سب سے بڑا خطرہ ہیں:امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی محکمہ دفاع کی ایک حالیہ رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ عرب خطے خصوصا عراق اور شام میں موجود ایران کی حمایت یافتہ ملیشیائیں خطے کے امن کے لیے سب سے بڑا خطرہ ہیں۔

پینٹاگان میں انسپکٹر جنرل کے ذریعہ جاری کردہ چوبیسویں رپورٹ جو گذشتہ سال اکتوبر اور دسمبر کے درمیان امریکی کانگریس کو پیش کی گئی تھی میں انکشاف کیا ہے کہ عراق اور شام میں اکثر ایران اور عراق کی حمایت یافتہ مسلح ملیشیاؤں کی وجہ سے خطرات لاحق ہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ان ملیشیائوں کی وجہ سے خطے میں بین الاقوامی اتحادی افواج کے لیے خطرات میں‌اضافہ ہوا ہے۔

ان ملیشیاؤں نے عراق اور شمال مشرقی شام میں بھی امریکی مفادات کو نشانہ بنانے میں اضافہ ہوا۔ انہوں نے امریکی حمایت یافتہ شامی ڈیموکریٹک فورسز پر بھی حملہ کیے۔

مزید برآں اس رپورٹ میں داعش کے خطرے اور اس کےحملوں کی دوبارہ واپسی کے خطرے پربھی انتباہ کیا گیا۔ رپورٹ میں‌ کہا گیا ہے کہ شام اور عراق میں موجود چھوٹے چھوٹے سیلز میں داعش کے 8 سے 16 ہزار جنگجو موجود ہیں۔