.

پاسداران انقلاب ایران کی برّی فورسز کی عراق کی سرحد کے نزدیک مشق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب کی برّی فورسز نے عراق کی سرحد کے نزدیک جمعرات کو سالانہ مشق شروع کردی ہے۔

ایران کے سرکاری ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اس مشق کا نام ’’پیغمبرعظیم‘‘ہے اور یہ ملک کے جنوب مغربی علاقے میں جاری ہے۔اس کا مقصد فوج کی حربی تیاریوں کاجائزہ لینا ہے۔

اس مشق کے دوران میں ڈرونز اور ہیلی کاپٹرز بھی استعمال کیے جائیں گے۔ایران کی مسلح افواج نے حالیہ مہینوں کے دوران میں فوجی مشقوں میں اضافہ کردیا ہے۔

ان فوجی سرگرمیوں کا مقصد امریکی صدر جوزف بائیڈن پر دباؤ ڈالنا ہے۔وہ ایران سے 2015میں طے شدہ جوہری سمجھوتے میں دوبارہ شامل ہونے کا اعلان کرچکے ہیں لیکن اس کی انھوں نے یہ شرط عاید کی ہے کہ اس سے پہلے ایران کو یورینیم کو اعلیٰ سطح پر افزودہ کرنے کی سرگرمیوں سے دستبردار ہونا ہوگا۔

جنوری میں پاسداران انقلاب نے بحرہند میں فوجی مشقیں کی تھیں اور جنگی جہازشکن بیلسٹک میزائلوں کا تجربہ کیا تھا۔

اس سے ایک ہفتہ قبل ایرانی بحریہ نے خلیج عُمان میں جنگی مشق کے دوران میں کروزمیزائلوں کا تجربہ کیا تھا۔اس کے علاوہ ایرانی بحریہ نے اپنی تیزرفتار کشتیوں کی خلیج فارس میں پریڈ کی تھی اور ایک بڑے ڈرون کا بھی تجربہ کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں