.

افغانستان میں اقوام متحدہ کے قافلے پر حملہ، پانچ افغان اہلکار ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان میں اقوام متحدہ کے امدادی مشن کے مطابق جمعرات کے روز صوبہ کابل میں اقوام متحدہ کے قافلے پر حملہ ہونے والے پانچ افغان سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہوگئے۔

مشن "یوناما" نے تصدیق کی ہے کہ اس حملے میں اقوام متحدہ کا کوئی اہلکار زخمی نہیں ہوا۔ حملہ دارالحکومت کابل سے باہر سوروبی علاقے میں ہوا۔"یوناما" نے "ٹویٹر" پر لکھاکہ افغانستان میں اقوام متحدہ کو کابل کے علاقے سوروبی میں جمعرات کے روز ہونے والے حملے میں افغانستان پروٹیکشن سروس ڈائریکٹوریٹ کے پانچ اہلکاروں‌ کی ہلاکت پر افسوس ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اس حملے میں اقوام متحدہ کا کوئی بھی ملازم زخمی یا ان کی گاڑی متاثر نہیں ہوئی۔ افغان پروٹیکشن سروس ڈائریکٹوریٹ کی ایک گاڑی سڑک کے کنارے نصب بم پھٹنے سے تباہ ہوگئی اور اس پر سوار پانچ اہلکار ہلاک ہوگئے۔

افغانستان کے لیے اقوام متحدہ کے نمائندہ خصوصی رمیز اکبروف نے ٹویٹر پر کہا ہے کہ افغانستان میں تشدد ختم ہونا ضروری ہے۔

حالیہ مہینوں کے دوران افغانستان میں تشدد میں اضافہ ہوا ہے حالانکہ طالبان اور افغان حکومت ستمبر سے قطر میں امن مذاکرات میں مصروف ہیں۔

دوحا میں ہونے والے یہ مذاکرات ابھی تک کسی نتیجے تک نہیں پہنچے ہیں۔ دوسری طرف طالبان کی طرف سے افغان فورسز پر حملوں‌ کا سلسلہ بھی جاری ہے۔