.

سعودی عرب:رواں تعلیمی سال میں فاصلاتی تدریس جاری رہے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں کرونا وائرس کی وَبا کے پیش نظر رواں تعلیمی سال کی باقی مدت میں فاصلاتی تدریس جاری رہے گی اور تمام سرکاری اور نجی اسکولوں اور جامعات میں طلبہ وطالبات کو فاصلاتی نظام کے ذریعے ہی اسباق پڑھائے جائیں گے۔

سعودی وزیرتعلیم ڈاکٹر حمد بن محمد آل الشیخ نے سوموار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’گذشتہ ہفتوں کے دوران میں صورت حال کا جائزہ لینے کے بعد رواں تعلیمی سال کی باقی مدت میں بھی فاصلاتی تدریس جاری رہے گی اور قابل اطلاق پروٹوکولز کے مطابق عمومی اور فنی تعلیمی اداروں اور جامعات میں آن لائن تدریس کا سلسلہ جاری رہے گا۔‘‘

دریں اثناء سعودی وزارتِ صحت نے گذشتہ 24 گھنٹے میں کروناوائرس کے 327 نئے کیسوں کی تشخیص کی اطلاع دی ہے۔اب مملکت میں کروناوائرس کے کل تشخیص شدہ کیسوں کی تعداد 375333 ہوگئی ہے۔

سعودی عرب میں موجودہ تعلیمی سال کا اگست 2020ء میں میں آغاز ہوا تھا اور ہزاروں طلبہ اور اساتذہ نے خود کو آن لائن پلیٹ فارم ’’مدرستی‘‘(میرا اسکول) پر رجسٹر (لاگ اپ) کیا تھا۔اس پلیٹ فارم کے ذریعے اساتذہ ورچوئل کلاسیں لے رہے ہیں۔طلبہ آن لائن تعلیمی ویڈیوز دیکھ سکتے ہیں اور نصابی کتب تک رسائی حاصل کرسکتے ہیں۔

طلبہ ، اساتذہ اور والدین کے لیے 24 گھنٹے ایک ہاٹ لائن اور مصنوعی ذہانت چیٹ باٹ بھی بنایا گیا ہے تاکہ تدریسی عمل میں سہولت بہم پہنچائی جاسکے۔مملکت کے جن علاقوں میں انٹرنیٹ کی تیزرفتارسہولت مہیا نہیں ، وہاں متعدد ٹی وی چینلز طلبہ کے لیے تدریسی خدمات مہیا کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ سعودی حکومت نے مملکت بھر میں کرونا وائرس کی وَبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے 9 مارچ 2020ء کو تمام اسکول ، جامعات اور دوسرے تعلیمی ادارے بند کردیے تھے۔ تب سے طلبہ وطالبات کی آن لائن فاصلاتی تدریسی سرگرمیاں جاری ہے۔