.

عرب اتحاد نے یمنی حوثیوں کا24 گھنٹے میں چوتھا حملہ ناکام بنادیا،بارود سے لدا ڈرون تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب اتحاد نے یمن سے حوثی ملیشیا کے بارود سے لدے سعودی عرب پر ایک اور ڈرون حملے کو ناکام بنا دیا ہے۔حوثی ملیشیا نے یہ ڈرون سعودی عرب کے جنوبی شہر خمیس مشیط کی جانب داغا تھا۔

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد نے گذشتہ 24 گھنٹے میں اس سے پہلے حوثیوں کے تین اور ڈرون اور میزائل حملے ناکام بنائے ہیں۔

عرب اتحاد نے جمعہ کی شب حوثی ملیشیا کے ایک بیلسٹک میزائل کو تباہ کرنے کی اطلاع دی تھی۔عرب اتحاد نے ایک بیان میں کہا کہ ایران کے حمایت یافتہ حوثی باغیوں نے اس میزائل حملے میں سعودی عرب کے جنوبی علاقوں میں شہری آبادیوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔

اس نے بیان میں مزید کہا کہ ’’ہم بین الاقوامی قانون کے مطابق شہریوں اور شہری اہداف کے تحفظ کے لیے آپریشنل اقدامات کررہے ہیں۔‘‘

حوثیوں نے جمعہ کی صبح اور سہ پہرکو خمیس مشیط کی جانب بارود سے لدے دو ڈرون چھوڑے تھے لیکن عرب اتحادی فورسز نے انھیں فضا ہی میں تباہ کردیا تھا۔خمیس مشیط سعودی عرب کے جنوب مغربی صوبہ عسیر میں ابھا شہر سے مشرق کی جانب واقع ہے۔

عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے ایک بیان میں کہا تھا کہ عرب اتحادی فورسز نے بارود سے لدے ایک ڈرون کوسراغ لگا کرتباہ کردیا ہے۔دہشت گرد حوثی ملیشیا نے اس ڈرون سے جان بوجھ کر خمیس مشیط میں شہریوں اور شہری اہداف کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔

ترجمان نے کہا کہ ’’ ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کی دہشت گردی کی یہ کارروائیاں اور ان کے ذریعے جان بوجھ کر شہریوں اور شہری اہداف کو نشانہ بنانے کی کوششیں جنگی جرائم کے زمرے میں آتی ہیں۔‘‘