.

گارمنٹ فیکٹری میں آتشزدگی، 20 مصری شہری ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے دارالحکومت قاہرہ کے شمال میں ایک گارمنٹ فیکٹری میں آگ لگنے سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد بیس ہوگئی ہے۔حکام کا کہنا ہے کہ آتشزدگی کے اس واقعے میں دو درجن سے زیادہ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

قاہرہ میں سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ جمعرات کے روز ایک گارمینٹ فیکٹری میں آگ لگ جانے کے واقعے میں کم از کم بیس افراد ہلاک اور چوبیس دیگر زخمی ہو گئے ہیں۔

حکومت کی طر ف سے جاری ایک بیان کے مطابق چار منزلہ عمارت میں واقع اس فیکٹری میں آگ لگنے کی وجہ ابھی تک معلوم نہیں ہوسکی ہے۔

آتش زدگی کا یہ واقعہ قاہرہ سے 35 کلومیٹر شمال میں واقع عبور صنعتی زون میں واقع ایک فیکٹری میں پیش آیا۔ مقامی حکام کا کہنا ہے کہ آگ پر قابو پانے کے لیے پندرہ فائر انجنوں کو لگایا گیا جو کافی مشقت کے بعد آگ کو دیگر فیکٹریوں تک پھیلنے سے روکنے میں کامیاب رہے۔

آتش زدگی کے واقعات

جمعرات کے روز پیش آنے والا آتش زدگی کا یہ واقعہ مصر میں آگ لگنے کے سلسلے کی تازہ ترین کڑی ہے۔ ملک میں حفاظتی معیار اور آگ پر قابو پانے سے متعلق ضابطوں کے نفاذ پر خاطر خواہ توجہ نہیں دی جاتی ہے۔

گذشتہ ماہ ہی قاہرہ کے مصروف ترین شاہراہ کے کنارے ایک تیل پائپ لائن سے تیل رسنے کی وجہ سے ادھر سے گزرنے والی کاروں میں آگ لگ گئی تھی جس کے سبب کم از کم سترہ افراد زخمی ہو گئے تھے۔

تقریباً چھ برس قبل عبور میں ہی ایک تین منزلہ گودام میں آگ لگ جانے سے درجنوں افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ یہ حادثہ ایک ایلیویٹر کے اندر گیس کنٹینر کے پھٹ جانے کی وجہ سے پیش آیا تھا۔